ایڈووکیٹ جنرل سرکاری محکموں کیخلاف مقدمات کے جلد فیصلوں کیلئے متحرک

ایڈووکیٹ جنرل سرکاری محکموں کیخلاف مقدمات کے جلد فیصلوں کیلئے متحرک

  

لاہور(نامہ نگارخصوصی)ایڈووکیٹ جنرل پنجاب شکیل الرحمن سرکاری محکموں کے خلاف زیر التواء مقدمات کی بروقت پیروی اور جلد فیصلوں کے لئے متحرک ہو گئے ، ایڈووکیٹ جنرل آفس میں سیکرٹری محکمہ مال لیاقت بھٹی نے ایڈووکیٹ جنرل کو محکمے کے خلاف زیر التواء مقدمات بارے بریفنگ دی۔ایڈووکیٹ جنرل آفس میں ایڈووکیٹ جنرل شکیل الرحمن کی زیر صدارت اجلاس منعقد ہوا جس میں سیکرٹری محکمہ مال لیاقت بھٹی، ڈپٹی سیکرٹری کالونیز قمر عباس اور ڈائریکٹر لیگل ذوالفقار علی کے علاوہ اسسٹنٹ ایڈووکیٹ جنرل انوار حسین، جمال ممدوٹ، چودھری سلطان، ایڈیشنل ایڈووکیٹ جنرل عظیم ملک ، ایڈیشنل ایڈووکیٹ جنرل شان گل، عارف راجہ، ملک وسیم ممتاز فردوس بٹ سمیت دیگر لاء افسروں نے شرکت کی، سیکرٹری محکمہ مال لیاقت بھٹی نے اجلاس کے شرکاء کو بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ عدالتوں میں محکمہ مال کے خلاف بیشتر مقدمات زیر التواء ہیں جن پر تحریری جواب داخل کرانے کے باوجود فیصلے نہیں ہو رہے، ایڈووکیٹ جنرل شکیل الرحمن نے محکمہ مال کے افسران کو ہدایت کی کہ محکمے کیخلاف تمام زیر التواء مقدمات کی فہرستیں اور ریکارڈ ایڈووکیٹ جنرل آفس کو فراہم کیا جائے تاکہ ان مقدمات کی بروقت پیروی کر کے ان کے فیصلے کروائے جائیں جبکہ سرکاری اراضی پر ناجائز قبضوں کے خلاف مقدمات کی فہرستیں بھی الگ سے فراہم کی جائیں، ایڈووکیٹ جنرل شکیل الرحمن نے مزید کہا کہ تمام سرکاری محکموں کے سربراہان کو ان کے محکموں کے خلاف زیر التواء مقدمات کی تفصیلات اور تعداد جاننے کے لئے خط لکھے جا رہے ہیں، ہرہفتے سرکاری محکموں کے ساتھ اجلاس منعقد کئے جائیں گے تاکہ حکومتی اداروں کے خلاف مقدمات کے جلد فیصلے ہو سکیں۔

ایڈووکیٹ جنرل

مزید :

صفحہ آخر -