امریکی شہری میتھیو بیرٹ کو جاسوس کہنا قبل از وقت اور ریمنڈ ڈیوس کے قصے سے جوڑنا مناسب نہیں ہے :ترجمان وزارت داخلہ

امریکی شہری میتھیو بیرٹ کو جاسوس کہنا قبل از وقت اور ریمنڈ ڈیوس کے قصے سے ...
امریکی شہری میتھیو بیرٹ کو جاسوس کہنا قبل از وقت اور ریمنڈ ڈیوس کے قصے سے جوڑنا مناسب نہیں ہے :ترجمان وزارت داخلہ

  

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک )ترجمان وزارت داخلہ نے کہا ہے کہ گرفتار امریکی شہری میتھیو بیرٹ کو جاسوس کہنا قبل از وقت ہے ،میتھیو بیرٹ کے واقعے کو ریمنڈ ڈیوس کے قصے سے جوڑنا مناسب نہیں۔

میڈ یا رپورٹس کے مطابق وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار کی زیر صدارت اجلاس میں ہوا جس میں وزارت داخلہ ،ایف آئی اے اور پولیس کے اعلیٰ افسران نے شرکت کے ۔اس موقع پر امریکی شہری میتھیو بیرٹ کے پاکستانی ویزا حاصل کر لینے کے معاملے پر غور کیا گیا۔ترجمان وزارت داخلہ نے کہا کہ میتھیو بیرٹ کو جن وجو ہات پر بلیک لسٹ کیا ،اس میں جاسوسی کی شق شامل نہیں تھی ۔انہوں نے کہا کہ امریکی شہری کے بلیک لسٹ ہونے کے باوجود پاکستانی ویزے کے اجرا پر امیگریشن حکام نے ابتدائی رپورٹ وزیر داخلہ کو پیش کردی ہے۔ان کا کہنا تھا کہ ریکارڈ دیکھے بغیر 24گھنٹے میں بلیک لسٹ پر موجود امریکی شہری کو ویزا جاری کیا گیا ،ابتدائی طور پر ذمے داری ہوسٹن میں پاکستانی سفارتخانے کے ویزا افسر پر عائد ہوتی ہے۔ترجمان وزارت داخلہ نے کہا کہ میتھیو بیرٹ کی نشاندہی آئی بی ایم ایس سسٹم انچارج فہد قیوم نے کی جس پر چوہدری نے نثار نے انہیں ایک لاکھ روپے انعام دینے کا اعلان کیا ہے ۔انہوں نے کہا کہ فہد قیوم کی نشاندہی کی بدولت میتھیو بیرٹ کی گرفتاری ممکن ہوئی۔اجلاس میں وزیر داخلہ نے ایف آئی اے کو امیگریشن کے سلسلے میں نئی پالیسی فریم ورک بنانے کی ہدایت اور آئندہ کسی غیر ملکی کو ویزے کا اجرا وزارت داخلہ کی منظور ی کے بغیر نہ کرنے پر بھی غور کیا گیا۔انہوں نے مزید کہا کہ اہلکاروں نے غفلت کا مظاہرہ کیا اور میتھیو کو اسلام آباد میں داخل ہونے کی اجازت دی ۔

مزید :

قومی -اہم خبریں -