اقتصادی راہداری کی تکمیل سے تجا رتی اور سماجی تبدیلیاں رونما ہوں گی:گورنر بلوچستان محمد خان اچکزئی

اقتصادی راہداری کی تکمیل سے تجا رتی اور سماجی تبدیلیاں رونما ہوں گی:گورنر ...
اقتصادی راہداری کی تکمیل سے تجا رتی اور سماجی تبدیلیاں رونما ہوں گی:گورنر بلوچستان محمد خان اچکزئی

  

کوئٹہ ( مانیٹرنگ ڈیسک)گورنر بلوچستان محمد خان اچکزئی نے کہا ہے کہ چین پاکستان اقتصادی راہداری کی تکمیل سے بڑے پیمانے پر اقتصادی، تجارتی اور سماجی تبدیلیاں رونما ہوں گی، سی پیک عوامی جمہوریہ چین کے روڈ اینڈ بیلٹ منصوبے کا ایک حصہ ہے جو دنیا کے تجارتی ومعاشی سرگرمیوں کے لئے مربوط کرنے کے سمندری راستوں کے متبادل کے طور پر پوری دنیا بالخصوص سینٹرل ایشیا اور مڈل ایسٹ کو زمینی راستوں کے ذریعے مربوط کرے گا۔

گورنر ہاؤس کوئٹہ میں چینی وفد کے سربراہ اقتصادی ماہر ومحقق چن گونگ Chen Gongکی قیادت میں ملنے والے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے گورنر بلوچستان نے کہا کہ چین پاکستان اقتصادی راہداری نہ صرف اس خطے بلکہ پوری دنیا کے لئے ترقی وخوشحالی کے ایک نئے دور کا آغاز ثابت ہوگا۔ انہوں نے توقع ظاہر کی کہ اقتصادی منصوبے کی تکمیل سے نہ صرف معاشی سرگرمیوں کو فروغ ملے گا بلکہ اس سے پورے خطے کے امن وامان کی صورتحال میں بہتری آئے گی۔ گورنر بلوچستان نے کہا کہ بلوچستان کی قلیل آبادی ہے اور یہاں مختلف شعبوں میں ترقی وسرمایہ کاری کے وسیع مواقع موجود ہیں۔

انہوں نے کہا کہ بلوچستان وسطی ایشیا سے خشکی کے راستے رابطے کا ذریعہ بھی مہیا کرسکتا ہے۔ گورنر نے پاک چائنا دوستی کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ گذشتہ کئی عشروں میں دونوں ملکوں کے درمیان تعلقات مستحکم ہوتے رہے ہیں اور اقتصادی راہداری سے دونوں پڑوسی ملکوں کے درمیان خوشگوار دوستانہ تعلقات مزید مستحکم ہوں گے۔ انہوں نے کہا کہ آج پاکستان BRICS اور شنگھائی تعاون تنظیم (SCO) میں شریک ہے جس سے ترقی پذیر ملکوں کو بامعنی تعاون مہیا کرنے کے امکانات کئی گنا بڑھ گئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ چین پاکستان اقتصادی راہداری سے بڑی توقعات اور امیدیں سے بڑی توقعات اور امیدیں وابستہ ہے اور اس سے مشرق اور مغرب کے ممالک مستفید ہوں گے۔ اس موقع پر چینی وفد کے سربراہ نے گورنر بلوچستان کی ذاتی کاوشوں کو سراہا ۔

مزید :

کوئٹہ -