فوڈ اتھارٹی کا پھل اور سبزی فروشوں کو لائسنس نیٹ میں لانے کا فیصلہ

فوڈ اتھارٹی کا پھل اور سبزی فروشوں کو لائسنس نیٹ میں لانے کا فیصلہ

  

لاہور(جنرل رپورٹر،نمائندہ پاکستان)پنجاب فوڈ اتھارٹی نے پھل اور سبزی فروشوں کو بھی لائسنس نیٹ میں لانے کا فیصلہ کر لیا ہے۔آغاز ضلع لاہور سے کیا جائے گا جس کے تحت پہلے مرحلے میں شہر لاہور میں پھل اور سبزی کی دکانوں کو فوڈ لائسنس جاری کیے جائیں گے۔جبکہ دوسرے مرحلے میں تمام خوانچہ اور ریڑھی پر پھل اور سبزی بیچنے والوں کو لائسنس جاری کیے جائیں گے۔انہیں کیٹیگری اے ،بی اور سی میں لائسنس جاری کیے جائیں گے جن کی لائسنسنگ فیس دو ہزار سے دس ہزار تک ہو گی۔لائسنس کی سالانہ بنیادوں پر تجدید ہو گی۔جس کی تصدیق ایڈیشنل ڈی جی فوڈ اتھارٹی شاہد عنایت ملک نے کی ہے۔اس حوالے سے پاکستان سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ پھل اور سبزی فروشوں کو لائسنس نیٹ میں لانے کا مقصد شہریوں کو معیاری اور حفظان صحت کے اصولوں کے مطابق سبزیاں اور پھل مہیا کرنا مقصود ہے۔یہ کام مرحلہ وار مکمل کیا جائے گا اور اس اقدام سے پھل اور سبزیوں کی طلب و رسد کا بھی پتہ چل سکے گا۔اور عوام مستقبل میں کسی بھی قسم کے سبزیوں اور پھلوں کے مصنوعی پیدا کردہ بحران سے بھی محفوظ رہ سکیں گے۔شاہد عنایت ملک نے کہا کہ پہلے مرحلے میں لاہور کے اندر ٹاؤن کی سطح پر سبزیوں اور پھل فروشوں کا ڈیٹا اکھٹا کیا جائے گا اور یہ معلوم کیا جا سکے گا کہ کیٹیگری اے،بی،اور سی میں کون کون لوگ آتے ہیں سبز اور پھل منڈیوں کے آڑتیوں کو بھی اس نیٹ میں شامل کیا جائے گا۔جو کیٹیگری اے میں شامل ہوں گے جبکہ کیٹیگری بی میں پھل اور سبزی کے دکاندار جبکہ سی کیٹیگری میں ریڑھی بان شامل ہوں گے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -