اراضی ریکارڈ سنٹرز میں صبح 7بجے سے ٹوکن سسٹم کے تحت باری کا سلسلہ شروع

اراضی ریکارڈ سنٹرز میں صبح 7بجے سے ٹوکن سسٹم کے تحت باری کا سلسلہ شروع

  

لاہور(عامر بٹ سے)عوام کی سہولت کو مد نظر رکھتے ہوئے اراضی ریکارڈ سنٹرز میں صبح 7بجے سے سہ پہر 2بجے تک ٹوکن سسٹم کے تحت باری کا سلسلہ شروع کر دیا گیا ہے۔ مالک اراضی باہر آویزاں لسٹ پر اپنے دستخط اور نشان انگوٹھا ثبت کرے گا ،وراثت کے حصول کے لئے ڈبل چکر ختم کر دیئے گئے ہیں ،اب اراضی ریکارڈ سنٹر موقع پر ہی وراثت کے اندراج کی تصدیق کرے گا ،بیمار ،بزرگ اور باپردہ خواتین کے لئے فرد کا اجرا اور انتقال کی تصدیق شدہ کاپی ان کے گھر کی دہلیز پر مہیا کی جائے گی اس حوالے سے موبائل سروس گاڑیاں خریدی جارہیں ہیں ،جو دیہی علاقوں میں سروے کرتی ر ہیں گی۔ ان خیالات کا اظہار پنجاب لینڈ ریکارڈ اتھارٹی کے ڈی جی کیپٹن (ر)ظفر اقبال نے روزنامہ پاکستان سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کیا،ڈی جی کیپٹن(ر)ظفر اقبال نے کہا کہ پنجاب کے 43اراضی ریکارڈ سنٹرز میں پنجاب بنک کا عملہ بٹھایا دیا ہے جو فرد انتقال کی فیس اب اراضی ریکارڈ سنٹرز کے اندر ہی وصول کرے گا ابتدائی طور پر تحصیل قصور اور رائے ونڈ سے ٹوکن سسٹم کے نئے سرے سے اجرا کی پریکٹس شروع کی ہے ،جس کے مطابق صبح 7بجے سے اراضی ریکارڈ سنٹرز کے باہر ایک لسٹ آویزاں کی جائے گی ،جس پر آنے والے شہری،نام ،دستخط کریں گے اور 7:45پر ٹوکن ایشو کیئے جائیں گے ۔جس شخص کو ٹوکن دیا جائے گا اسے مکمل سروس مہیا کی جائے گی، شہریوں کے بیٹھنے کے لئے الگ ویٹنگ روم بنائے جائیں گے باہر سکرین لگائی جا ئینگی جس پر ٹوکن نمبر کے حوالے سے آگاہی دی جائے گی اس کے علاوہ مائیک اور سپیکر پر باری باری آنے کے حوالے سے اطلاع بھی کی جائے گی ، صوبے بھر کے دیہی علاقوں میں بیمار ،بزرگ ،شہریوں ،باپردہ خواتین کی سہولت کے لئے موبائل سروس گاڑیاں خرید ی جارہی ہیں اس حوالے سے ابتدائی طور پر اس سروس کا آغاز قصور ،شیخوپورہ اور گوجرانوالہ کے اضلاع سے کیا جائے گا موبائل سروس گاڑیوں کی خرید اری کی سمری سی ایم ہاؤس بھیج دی ہے منظوری کے بعد فوری طور پر سروس مہیا کی جاے گی۔ وراثت انتقال کے اندراج اور تصدیق کے دوران شہریوں کی کثیر تعداد کو شدید مشکلات کا سامنا ہے اس حوالے سے روزنامہ پاکستان میں بھی بار بار نشاندہی کی گئی ہے جس پر فیلڈ سٹاف کی رپورٹ ختم کرے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ سینئر ممبر بورڈ آف ریونیو پنجاب سے باضابطہ اجازت کے لئے سمری بھیجی ہے جس کی منظوری کے بعد ڈبل چکر لگانے کا سلسلہ بند ہو جائے گا شہری اراضی ریکارڈ سنٹرز کی ایک ہی چھت تلے اپنی وراثت زمین اپنے نام منتقل کر ا پائیں گے انتقال ،فرد اور وراثت کی فیس کے حوالے سے بہت بڑی ذمہ داری تھی جو سٹاف اور سائلین پر عائد ہوتی تھی اب اس کا بھی انتہائی آسان طریقہ کار رائج کر دیا ہے پنجاب بنک کے صوبے کی43تحصیلوں میں کاؤنٹر نصب کئے جاچکے ہیں اور اگست میں صوبے بھر کے اراضی ریکارڈ سنٹر میں پنجاب بنک کاؤنٹر لگادیئے جائیں گے تمام فیس وہی وصول کریں گے۔

اراضی۔ٹوکن سسٹم

مزید :

علاقائی -