اب عدلیہ سرے محل کیس بھی کھولے

اب عدلیہ سرے محل کیس بھی کھولے
 اب عدلیہ سرے محل کیس بھی کھولے

  

اسلام آباد(صباح نیوز)پاکستان مسلم لیگ (ضیاء) کے سربراہ اور رکن قومی اسمبلی محمد اعجاز الحق نے کہا ہے کہ اب عدلیہ کو سرے محل کا کیس بھی کھولنا چاہیے اور سوئس بنکوں میں پڑے ہوئے ساٹھ ملین ڈالرز اور لاکرز میں پڑے ہوئے زیورات بھی واپس لانے کے اقدامات ہونے چاہئیں ملک میں جمہوری عمل اس وقت مضبوط ہوگا جب سیاسی جماعتیں اپنے اندر جمہوریت لائیں گی کیس بھی سیاسی جماعت کی قیادت نے اپنی متبادل قیادت تیار نہیں کی شہباز شریف کو مسلم لیگ (ن) کا قلعہ نہیں چھوڑنا چاہیے پنجاب میں مسلم لیگ (ن) کمزور ہوئی تو وفاق میں بھی حکومت نہیں بنا سکے گی اگلے عام انتخابات میں مسلم لیگ (ن) کو پہلے سے ذیادہ ووٹ ملیں گے ملک اس وقت بہت سنگین مسائل میں گھرا ہوا ہے سیاسی جماعتوں‘ پارلیمنٹ اور فوج سب کو اپنے اپنے دائرہ کار میں رہ کر ملک کو مسائل سے باہر نکالنا چاہیے عائشہ گللائی کو الزام لگانے کے بعد اب پی ٹی آئی کی اسمبلی نشست چھوڑ دینی چاہیے وہ جس طرح احتجاج کر رہی ہیں یہ قانون اور آئین کے بھی متصادم ہے گزشتہ روز اپنے دفتر میں اخبار نویسوں سے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ سیاسی جماعتیں شخصیات کے گرد گھومتی ہیں مسلم لیگ(ن) میں نواز شریف کا کوئی متبادل نہیں ہے ۔

ا عجاز الحق

مزید :

صفحہ اول -