انسٹیٹیوٹ فارآرٹ اینڈ کلچر میں اوپن ہاؤس کا انعقاد

انسٹیٹیوٹ فارآرٹ اینڈ کلچر میں اوپن ہاؤس کا انعقاد

لاہور(فلم رپورٹر)پاکستان میں آرٹس کے مختلف شعبوں کی جدید تقاضوں کے مطابق بہترین اور معیاری تعلیم کے فروغ کیلئے رائے ونڈ روڈ پر انسٹیٹیوٹ فار آرٹ اینڈ کلچر کا قیام عمل میں لایا گیا ہے جہاں گزشہ روز رجسٹریشن اور سپیشلائزڈ کورسز کے متعلق نوجوان طلبا کی راہنمائی کیلئے اوپن ہاؤس کا اہتمام کیا گیا جس میں طلبا ، والدین اور اساتذہ کی بڑی تعداد نے شرکت کی ۔ اوپن ہاؤس کے آغاز میں طلبا کو ادارے کے قیام ، دستیاب تعلیمی سہولیات کے متعلق دستاویزی فلم کی سکریننگ دکھائی گئی جس کے بعد ایمفی تھیٹر میں بین الاقوامی شہرت یافتہ ڈانسر وہاب شاہ نے اپنے گروپ کے ساتھ روایتی اور جدید ڈانس فارمزکے حسین امتزاج پر مبنی سحر انگیز پرفارمنس سے گرینڈ کلچرل گالاکا آغاز کیا ۔ وہاب شاہ کی دوسری پرفارمنس’’ اڈی جا‘‘کو بھی شائقین نے خوب سراہا، نئی گلوکارہ امن علی کے سریلے گیتوں کے بعد پٹیالہ گھرانے کے نوجوان گائیکوں نایاب علی ، انعام علی اور ولی حامد نے اپنے روایتی انداز میں سر اور لے سے سجی بہترین پرفارمنس سے شائقین کو جھومنے پر مجبور کردیا ۔ تینوں فنکاروں نے اپنے گھرانے کی روایات کی ترجمانی کرتے ہوئے کلاسیکی ، سیمی کلاسیکی ، غزل اور گیتوں کے بعد دھمال پر اپنی پرفارمنس کا اختتام کیا ۔میوزیکل نائٹ میں انسٹیٹیوٹ فار آرٹ اینڈ کلچر کے چانسلر سید شاہد علی ، وائس چانسلر پروفیسر ساجدہ وندل اورپرو وائس چانسلر پروفیسر پرویز وندل سمیت اساتذہ اور طلبا کی بڑی تعداد نے بھی شرکت کی ۔

مزید : کلچر