عید سے 3ہفتے ہی شہر جانوروں کا گڑھ بن گیا

عید سے 3ہفتے ہی شہر جانوروں کا گڑھ بن گیا

لاہور(جاوید اقبال،تصاویر ندیم احمد)صوبائی دارالحکومت عید الضحیٰ سے 18روز قبل ہی مویشی منڈی میں تبدیل ہو گیا ہے۔ ضلعی انتظامیہ نے شہر میں جانوروں کے داخلے اور جانور رکھنے پر پابندی عائد کر رکھی ہے اور اس کیلئے دفعہ 144بھی نافذ کی گئی ہے دوسری طرف شہر میں قائم کی گئی 7مقامات پر قائم کی گئی منڈیوں میں بیرون شہروں سے آنے والے بیوپاریوں کو سہولیات فراہم نہیں کی گئی جانوروں کیلئے پانی، خیمے اور چارہ کا خاطر خواہ انتظام نہیں کیا جس کی وجہ سے بیوپاری شہر آبادی کا رخ کر رہے ہیں ۔گزشتہ روز شہر میں کئے گئے سروے کے دوران انکشافات ہوئے ۔سروے رپورٹ کے مطابق شہر کے 7مقامات کو ضلعی انتظامیہ نے جانوروں کی خرید و فروخت کیلئے سیل پوائنٹ قرار دیا ہے مگر ان مقامات پر سینکڑوں بیوپاری اپنے جانوروں سمیت آ چکے ہیں مگر ابھی تک ان مقامات پر ضروری سہولیات فراہم نہیں کی جا سکیں ۔لائیو سٹاک کی طرف سے بیمار جانوروں کیلئے علاج کی سہولت فراہم کرنے کیلئے کیمپ تو لگا دیئے گئے ہیں مگر موقع پر ادویات اور ویٹرنری ڈاکٹرز تک موجود نہ ہیں ۔جن علاقوں میں جانوروں کی بھرمار ہوچکی ہے ان میں صدر بازار ،تاج پورہ ، داروغہ والا، لال پل، باغبانپورہ، جی ٹی روڈ ، شاہدرہ، کوٹ عبدالمالک، لجپت روڈ سمیت سینکڑوں مقامات پر شامل ہیں،جس سے شہر میں جانوروں سے جراثیم اور دیگر وائرس انسانوں میں منتقل ہو سکتے ہیں اسی حوالے سے ڈپٹی کمشنر لاہور کیپٹن(ر) انوار الحق سے بات کی گئی تو انہوں نے کہا کہ 7مقامات پر ہی جانور فروخت کرنے کی اجازت ہے شہر میں جانور فروخت نہیں کئے جا سکتے انہوں نے کہا کہ اس بات کا نوٹس لیا جائے گا تاہم جن منڈیوں میں سہولیات کا فقدان ہے ان کو پورا کیا جائے گا انہوں نے کہا کہ خود دورے کروں گا جہاں کوتاہی نظر آئی ایکشن ہو گا۔

مزید : صفحہ اول