ہسپتالوں میں صفائی کا نظام درہم برہم ، ایئر کنڈیشنڈ سسٹم ناکارہ

ہسپتالوں میں صفائی کا نظام درہم برہم ، ایئر کنڈیشنڈ سسٹم ناکارہ

لاہور(جاوید اقبال) صوبائی دارلحکومت کے ہسپتالوں میں صفائی کانظام درہم برہم اورائیرکنڈیشنڈکانظا م ناکارہ ہوگیاہے۔جن ہسپتالوں میں صفائی کا دہرانظام ہے آدھے حصو ں کوآڈٹ سروس کیاگیاہے اور آدھے حصے ہسپتالوں کے پاس ہیں ان حصوں میں صفائی کانظام ناقص ہونے سے ہسپتال گندگی اور کوڑے کرکٹ کے ڈھیربن گئے تمام ہسپتال نائٹ شفٹ پراور ایوننگ شفٹ میں ہسپتال گندگی میں تبدیل ہوجاتے ہیں رات کے وقت ہسپتالوں کی 70 فیصد گذرگاہیں وارڈ اور برآمدے اندھیروں میں ڈوب جاتے ہیں دوسری طرف شہرکے سرکاری ہسپتالوں کے 60فیصد اے سی سسٹم کا م کرناچھوڑ گیاہے جس سے ہسپتالوں کے وارڈ شدید حبس سے زیر علاج مریض پریشان ہیں سب سے زیادہ براحال سرجری آرتھوآئی ای این ٹی وارڈوں میں جما آپریشن زدہ مریض شدید گرمی اور حبس میں اذیت کاشکارہیں یہ انکشافات شہرکے ہسپتالوں میں کی گئی سروے کے رپورٹ میں سامنے آئے بتایاگیاہے کہ شہر کے 90فیصد ہسپتالوں میں صفائی کانظام درھم برھم ہوگیاہے صفائی کانظام آڈٹ سروس ہونے سے ہسپتالوں میں صفائی کانظام بہترہونے کی بجائے خراب ہواہے ٹھیکدارکمپنیوں نے صفائی کے نئے معاہدوں کے مطابق عملہ میں رکھا ان کمپنیوں نے مطلوبہ تعداد سے 50 فیصد عملہ کم رکھاہے جس سے صفائی کی بہترنہیں ہوسکی وارڈوں کے اندر کوڑاکرکٹ اور پیٹیاں اور دیگر سٹم کا سامان بکھرانظرآتاہے اس حوالے سے سیکرٹری محنت ثاقب ظفر کاکہناہے ناقص صفائی کانوٹس لیاجائے گاآڈٹ سروس کے عید صفائی کی حالت خراب کیوں ہوتی اس کاخفیہ انفکیشن کرائی جائے گی جس ہسپتال سب نظام خراب ہواکاروائی کی جائے گی اے سی کی خرابی چلانے کا بھی نوٹس لیاجائے گا۔

B

مزید : میٹروپولیٹن 1