انسداد ڈینگی ، پولیو اور کانگو پلان پر عملدرآمد میں کوتاہی ناقابل برداشت ہو گی

انسداد ڈینگی ، پولیو اور کانگو پلان پر عملدرآمد میں کوتاہی ناقابل برداشت ہو ...

لاہور ) جنرل رپورٹر)نگران وزیراعلیٰ پنجاب ڈاکٹر حسن عسکری سے نگران صوبائی وزیر صحت ڈاکٹر جواد ساجد خان نے گزشتہ روز ملاقات کی،وزیراعلیٰ آفس میں ہونیوالی ملاقات میں صحت عامہ کیلئے جاری منصوبوں اور ہیلتھ کیئر کی سہولتوں کو مزید بہتر بنانے کیلئے اقدامات پر تبادلہ خیال کیا گیا ،اس موقع پر انسداد ڈینگی، پو لیو اور کانگو کیلئے کئے جانیوالے اقدامات پر بھی بات چیت کی گئی۔نگران وزیراعلیٰ نے انسداد ڈینگی،پولیو اورکانگو کی روک تھام کیلئے وضع کردہ پلان پر عملدر آمد یقینی بنانے کی ہدایت کی اورکہا متعلقہ محکمے اورادارے اس ضمن میں فعال ومتحرک انداز میں کردارادا کریں جبکہ حکام اورعملہ پیشہ وارانہ انداز میں فرائض سرانجام د ے ۔نگران وزیراعلیٰ کہا ڈینگی،پولیو اور کانگو وائرس کی روک تھام کیلئے بھرپور توجہ دی جائے اور اس مقصد کیلئے تمام ضروری وسائل بروئے کار لائے جائیں۔ پولیو سے پاک پاکستان ہم سب کا مشن ہے، لہٰذا انسدادپولیو مہم کامیاب بنائی جائے کیونکہ یہ بچوں کے صحتمند مستقبل کی ضمانت ہے۔پاکستان کو پولیو فری خطہ بنانے کیلئے کوئی کسر اٹھا نہ رکھی جائے گی اور پنجاب حکومت پوری سنجیدگی کیساتھ پولیو کے تدارک کیلئے دن رات کام کر رہی ہے۔بروقت ویکسی نیشن کے ذریعے بچوں کو اس موزی مرض سے بچایا جا سکتا ہے۔ پولیو کے خاتمے کیلئے موثر اقدامات کا تسلسل معاشرے کی اجتماعی ذمہ داری ہے اور انسدادپولیو مہم کو کامیاب بنانے کیلئے مساجد، دینی مدارس،سکولوں اور متعلقہ اداروں کو ملکر کام کرنا ہو گا۔انہوں نے والدین سے اپیل کی کہ وہ پولیو کے مرض کے خاتمے کیلئے حکومتی کوششوں کا حصہ بنیں ۔وزیراعلیٰ نے ہدایت کی کہ عیدالاضحی کی آمد کے پیش نظر کانگو وئراس سے بچاو کیلئے حفاظتی اقدامات کئے جائیں اور متعلقہ محکمے کانگو وائرس سے بچاؤ کیلئے وضع کردہ پلان پر عملدرآمد یقینی بنائیں۔ عوام کو کانگو وائرس سے محفوظ رکھنے کیلئے ہنگامی بنیادوں پر ہر ممکن اقدام اٹھایا جائے اور جہاں بھی کانگو وائرس پھیلنے کا خدشہ ہو وہاں فی الفور تمام احتیاطی اقدامات کئے جائیں اور مویشی منڈیوں کی خصوصی سکریننگ کرتے ہوئے جراثیم کش سپرے کیا جائے اور عالمی ادارہ صحت کی وضع کردہ احتیاطی تدابیر پر عملدرآمد کو ہر قیمت پر یقینی بنایا جائے ۔محکمہ صحت اور لائیوسٹاک احتیاطی تدابیر اور وائرس سے بچاؤ کے حوالے سے ہر ممکن اقدامات کریں۔ڈینگی سرویلنس کا کام تیز کیا جائے اور متعلقہ ادارے پوری طر ح چوکس ہو کر فرائض سرانجام دیں۔ ڈینگی کے مرض کے روک تھام کیلئے وضع کردہ پلان پر عملدرآمد کے حوالے سے کوئی کوتاہی یا غفلت برداشت نہیں کی جائے گی۔عام آدمی کو صحت کی معیاری سہولتوں کی فراہمی کیلئے متعلقہ حکام کو بھی فعال اور متحرک کردار ادا کرنا ہے۔ نگران حکومت نے مستحق مریضوں کے مفت علاج معالجہ کیلئے 15 کروڑ 44 لاکھ روپے کے فنڈز جاری کئے ہیں ۔مریضوں کے مفت علاج کیلئے فنڈزکسی پر احسان نہیں بلکہ ہر حکومت کا فرض ہے۔

ڈاکٹر حسن عسکری

مزید : کامرس