عامرڈ ٖوگر کو بجلی چوری میں ملوث کرنیوالے اہلکاروں کیخلاف کارروائی ٹھپ

عامرڈ ٖوگر کو بجلی چوری میں ملوث کرنیوالے اہلکاروں کیخلاف کارروائی ٹھپ

ملتان ( سٹاف رپورٹر) رکن قومی اسمبلی عامر ڈوگر کو بجلی چوری کے سنگین کیس میں ملوث کرنے والے سرویلنس اہلکار وں کے خلاف کارروائی نہ ہو سکی۔ معاملہ دبانے کی کوششیں شروع کر دی گئی(بقیہ نمبر47صفحہ7پر )

۔ تفصیل کے مطابق میپکو کینٹ ڈویژن کی سرویلنس ٹیم میں شامل لائن سپرنٹنڈنٹ توفیق خان اور میٹر انسپکٹر جاوید اختر نے ایکسین کینٹ وسیم اختر کو رپورٹ دی تھی کہ انہوں نے چیکنگ کی تو انڈسٹریل اسٹیٹ سب ڈویژن کے علاقے میں تحریک انصاف کے رکن قومی اسمبلی عامر ڈوگر تھری فیز میٹرٹمپرڈ کرکے بجلی چوری کرتے پائے گئے ہیں ۔شبہ ہے کہ بجلی چوری کا سلسلہ طویل عرصے سے جاری ہے۔ اس پر عامر ڈوگر کا میٹر اتار لیا گیا۔ ذرائع کے مطابق سرویلنس ٹیم کی رپورٹ پرایکسین کینٹ ڈویژن وسیم اختر نے رکن قومی اسمبلی عامر ڈوگر کے خلاف تھانے میں بجلی چوری کا مقدمہ درج کرانے کی ہدایت کی۔اپنے افسر کے آرڈر کے مطابق ایس ڈی او انڈسٹریل اسٹیٹ نے ایم این اے عامر ڈوگر کے خلاف تھانہ مظفر آباد میں بجلی چوری کا مقدمہ درج کرادیا اور 6سال سے بجلی چوری کرنے پر ایم این اے عامر ڈوگر کو 17لاکھ روپے سے زائد جرمانہ عائد کیا گیا ۔ ایم این اے عامر ڈوگر نے جگ ہنسائی ہونے پر اپنی صفائی میں پریس کانفرنس کی مگر میپکو کے ذمہ داران نہ مانے۔ رکن قومی اسمبلی عامر ڈوگر کی درخواست میں میپکو انتظامیہ نے بجلی چوری کے الزام کی تحقیقات کے لئے اعلی ٰ افسران پر مشتمل 3رکنی کمیٹی تشکیل دی جس نے انکوائری کی تو رکن قومی اسمبلی عامر ڈوگر کے خلاف بجلی چوری کا الزام ثابت نہ ہو سکااور جرمانہ کی رقم17لاکھ بھی ختم کر دی گئی اور عامر ڈوگر نے تقریباًایک لاکھ روپے کا بل ادا کیا۔کئی ماہ گزرنے کے باوجود ایم این اے کے خلاف بجلی چوریکیکیس کی وجہ بننے والے سرویلنس اہلکارو ں توفیق خان لائن سپرنٹنڈنٹ اور جاوید اختر میٹر انسپکٹر کے خلاف کارروائی نہیں ہو سکی ہے ۔ بتایا گیا ہے کہ اس سے قبل گلگشت کالونی میں ایگزیکٹو لاجز میں بجلی چوری کے سنگین کیس میں لائن سپرنٹنڈنٹ توفیق خان کا نام شامل تھا جبکہ میٹر انسپکٹر جاوید اختر کی اصل پوسٹنگ مظفر گڑھ میں ہے اور وہ عارضی اٹیچمنٹ پر ملتان میں ڈیوٹی کر رہا ہے۔ واضح رہے کہ سپریم کورٹ آف پاکستان نے عارضی اٹیچمنٹ پر تعیناتیوں پر پابندی عائد کر رکھی ہے لیکن یہ آرڈر میٹر انسپکٹر جاوید اختر پر لاگو نہیں ہوا ہے۔معلوم ہوا ہے کہ اب تحریک انصاف کی حکومت قائم ہونے جار ہی ہے اور ان دونوں اہلکاروں کو بچانے کے لئے معاملے کو دبانے کی کوشش کی جا رہی ہے۔

عامر ڈوگر

مزید : ملتان صفحہ آخر