سندھ ہائیکورٹ، بابرغوری دور میں غیر قانونی بھرتیوں پر نیب سے جواب طلب

سندھ ہائیکورٹ، بابرغوری دور میں غیر قانونی بھرتیوں پر نیب سے جواب طلب

کراچی (این این آئی)سندھ ہائیکورٹ نے سابق وفاقی وزیر پورٹ اینڈ (بقیہ نمبر30صفحہ12پر )

شپنگ بابرغوری کے دور میں کے پی ٹی میں غیر قانونی بھرتیوں سے متعلق نیب حکام کو آئندہ سماعت تک جامع جواب جمع کرانے کی ہدایت دیدی۔دو رکنی بینچ کے روبرو سابق وفاقی وزیر پورٹ اینڈ شپنگ بابرغوری کے دور میں کے پی ٹی میں غیر قانونی بھرتیوں سے متعلق سابق جنرل منیجر کے پی ٹی روف اختر فاروقی کی درخواست ضمانت کی سماعت ہوئی۔نیب حکام نے موقف اختیار کیا کہ جامع جواب داخل کرنے کیلئے مہلت دی جائے جس پر عدالت نے آئندہ سماعت تک جامع جواب داخل کرنے کی ہدایت کردیتے ہوئے سماعت 20 اگست تک ملتوی کردی۔نیب کے مطابق رؤف اختر فاروقی سمیت دیگر کو سابق وزیر بابر غوری کی سفارش پر کے پی ٹی کا جنرل منیجر بنایا گیا تھا۔ ملزمان کے خلاف کرپشن اور غیر قانونی بھرتیوں کے شواہد موجود ہیں۔ عدالت نے روف اختر فاروقی کی درخواست ضمانت میں آئندہ سماعت تک توسیع کردی۔غیرقانونی بھرتیوں کے ریفرنس میں ملزم نامزد کر دیا گیا ، ایم کیوایم رہنما بابر غوری ملک سے باہر ہیں، اس لیے گرفتار نہیں کرسکے، ملزمان کے خلاف ریفرنس دائر کرنے کے لیے معاملہ اسلام آباد بھیج دیا ہے۔

غیر قانونی بھرتیاں

مزید : ملتان صفحہ آخر