ٹیکس نظام ، معاشی اصلاقحات کی بہتری پر توجہ دی جا ئیگی : شاہ محمود قریشی

ٹیکس نظام ، معاشی اصلاقحات کی بہتری پر توجہ دی جا ئیگی : شاہ محمود قریشی

ملتان ( نیوز رپورٹر)پاکستان تحریک انصاف کے وائس چیئرمین مخدوم شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ تحریک انصاف حالیہ انتخابات میں ملک کی سب سے بڑی اور مقبول ترین جماعت ثابت ہوئی ہے۔ تحریک انصاف نے ریکارڈ ایک کروڑ 68 لاکھ ووٹ حاصل کئے ہیں۔عوام کا پارٹی پر اعتماد مضبوط بنائیں گے۔ تحریک انصاف وفاق کی علامت ہے۔ جو کہ آج وفاق اور ہر صوبے میں موجود ہے۔ عددی لحاظ سے مرکز میں حکومت بنانے کے قابل ہو گئے (بقیہ نمبر14صفحہ12پر )

ہیں۔ پارلیمانی کمیٹی نے آج عمران خان کو اپنا پارلیمانی لیڈر منتخب کیا ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز اسلام آباد میں تحریک انصاف اور اس کی اتحادی جماعتوں کی پارلیمانی اراکین کے اجلاس سے کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ رکن قومی اسمبلی ملک عامر ڈوگر ۔ فواد چودھری ودیگر شخصیات ان کے ہمراہ تھے۔ مخدوم شاہ محمود قریشی نے کہا عمران خان کی 22سالہ سیاسی جدوجہد کا ثمر مل گیا ہے۔ وزیراعظم عمران خان کے ساتھ ملکر ہم نے نیا پاکستان بنانا ہے۔ تحریک انصاف کے خوف سے اپوزیشن جماعتوں نے ایک غیر فطری اتحادبنایاہے۔ جس میں ہم آہنگی نظر نہیں آرہی اورجس میں اسٹیٹس کو کا ٹولہ یکجا ہو گیا ہے۔ جو دیر پاء چلتا نظر نہیں آرہا۔انہوں نے کہا کہ عمران خان نے تمام اراکین کو انتخابات جیتنے کے بعد مبارک باد پیش کی اور حکومت بننے کے بعد سامنے نظر آنے والے چیلنجز سے متعلق پارٹی کو اعتماد میں لیا۔ انہوں نے چیلنجز سے نمٹنے کے طریقے کار پر روشنی ڈالی۔ انہوں نے ٹیکس وصولی ، معاشی اصلاحات کی بہتری اور گڈ گورننس کے اصولوں پر روشنی ڈالی۔ جبکہ ملک کی مستقبل کی خارجہ پالیسی بارے بھی آگاہ کیا۔عمران خان نے اراکین کوکہا کہ میں جو کام خود نہیں کرسکتا اس کا آپ سے تقاضا نہیں کرونگا۔ملک سے پروٹوکول کلچر کا خاتمہ کرونگا۔ مخدوم شاہ محمود قریشی نے بتایا کہ تحریک انصاف نے پاکستان کے مفادات کو مد نظر رکھ کر فیصلے کرنے ہیں۔ ہم نے ملک کے وسیع تر مفاد اور عوام کی خواہشات کو ترجیح دینی ہے۔ انہوں نے کہا کہ عمران خان نے اجلاس میں یہ باور کروایا ہے۔ کہ ہمیں یکسوئی اور یکجہتی کا مظاہرہ کرنا چاہئے تھا۔ تحریک انصاف اپنی کارکردگی سے ثابت کریگی کہ ہمارا طریقہ کار دوسری سیاسی جماعتوں سے مختلف تھا۔ انہوں نے کہا تحریک انصاف پر اب اقتدار میں بھاری ذمہ داری عائد ہوتی ہے۔ تحریک انصاف کی کامیابی کے بعد ملکی ترقی کے ایک نئے دور کا آغاز ہوگا۔ مخدوم شاہ محمود قریشی نے میڈیا کو بتایا آج ہم نے قومی اسمبلی اور سینیٹ کے اراکین کو اجلاس میں شرکت کی دعوت دی تھی۔ قومی اسمبلی کے 170 اراکین نے اجلاس میں شرکت کی ہے۔ قبل ازیں مخدوم شاہ محمود قریشی نے پارلیمانی کمیٹی کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ آج کا دن تاریخی اہمیت کا حامل ہے۔ تحریک انصاف اور اس کے اراکین عمران خان کو متفقہ طور پر وزیراعظم اور پارلیمانی لیڈر کے طور پر چناؤ کررہے ہیں۔ مخدوم شاہ محمود قریشی نے بطور وائس چیئرمین تحریک انصاف پارلیمانی کمیٹی کے اجلاس میں قرار داد پیش کی ۔ جس کی رو سے پارلیمانی اراکین نے متفقہ طور پر عمران خان کو وز یراعظم اور پارلیمانی لیڈر منتخب کرنے کا اعلان کیا ۔ مخدوم شاہ محمود قریشی نے پارلیمانی پارٹی کے اراکین کو 2018ء کے الیکشن کی صورتحال ، وزیراعظم ، سپیکراو رڈپٹی سپیکر کے الیکشن کے بارے میں بریف کیا۔اجلاس میں تحریک انصاف اور اتحادی جماعت کے نومنتخب اراکین نے شرکت کی۔

مزید : ملتان صفحہ آخر