فتح پور،مجھے اور میرے منشی کو اغوا کیا گیا،انصاف فراہم کیا جائے،اسلم سکھیرا پٹواری کی پریس کانفرنس

فتح پور،مجھے اور میرے منشی کو اغوا کیا گیا،انصاف فراہم کیا جائے،اسلم سکھیرا ...

فتح پور(سٹی رپورٹر) محکمہ مال فتح پور کے لا پتہ پٹواری اور اس کا منشی کئی روز کے بعد گھر واپس پہنچ گئے تفصیل کے مطابق محمد اسلم(بقیہ نمبر27صفحہ12پر )

سکھیرا پٹواری نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے بتایا کہ 28جولائی کو میں اپنے گھر میں موجود تھاکہ چوہدری انعام الحق کی کال آئی اور ضروری کام کے سلسلہ میں اپنے دفتر واقع چک نمبر 107 ایم ایل میں بلایا ، میں اپنی موٹر سائیکل پر اس کے دفتر گیا اور اس نے اپنے پچھلے کمرہ میں بلا یا ،چوہدری انعام الحق نے مجھے کہا کہ میرے کھاتہ کی جمع بندی اور خسرہ کی نقلیں دیں، میں نے کہا کہ میں مظفر گڑھ جا رہا ہوں آکر دے دوں گا ، چوہدری انعام الحق نے بغیر نقلیں دئیے جانے سے روک دیا اور منشی ناصر کو چوہدری انعام نے اپنے موبائل نمبر سے موقع پر بلایا ، اس دوران سٹیمپ فروش ابراہیم لودھی بھی موقع پر پہنچا اور اس سے 10,10کروڑ کے تین پر نوٹ لکھنے کو کہا،اس دوران چوہدری انعام نے کہا کہ میرے رقبہ کے انتقالات کی جلدیں دو،میں نے کہا کہ جلدیں تحصیلدار بشیر خان کے پاس ہیں،تحصیلدار بشیر خان سے چوہدری انعام الحق نے رابطہ کیا تو انہوں نے کہا کہ جلدیں پٹواری کے پاس ہیں، اس دوران ابراہیم لودھی اسٹام فروش بہانہ بنا کر وہاں سے چلا گیا اور واپس نہ آیا ،اس کے منشی نے پرنوٹ پر دستخط اور انگوٹھے لگوا لئے ، اس دوران میرا منشی جمع بندی اور خسرہ کی نقلیں لے کر آگیا ، اس دوران مجھے اور میرے منشی کو گن پوائنٹ پر گاڑی میں ڈالا اور ساتھ مسلح دو گن مین بیٹھا دئے،اور خود انعام الحق دوسری گاڑی میں اپنے ساتھ بابر مرزا ،محمد سلیم، پر سنل سیکر ٹری شوکت ،شیخ عمران کے ہمراہ بیٹھ گئے ،مجھے اور میرے منشی کو لیہ میں اپنی کوٹھی پر لے گئے ،مجھ پر ڈنڈوں سے تشدد کیا ،تشدد کرنے کے بعد مجھ سے دفتر کی چابیاں لے کر اور میرے منشی سے 107ایم ایل والی جلدیں کہاں ہے، جس نے بتلادیا ،منشی ناصر کو علیحدہ کمرے میں بند کر دیا ، بابر مرزا، محمد سلیم، شوکت اور لشاری کار ڈرائیور کار لے کر ،چابیاں لیکر فتح پور آ گئے ، اس دوران ایک عرضی نویس آ گیا ،جس کے پاس رجسٹر تھے ، اس نے تین پر نوٹ پر دستخط اور انگوٹھے لگوالئے ،اور ایک پر نوٹ ناصر منشی کا بھی تحریر کیا ، بابر مرزا وغیرہ فتح پور سے ریکارڈ لے کر وہیں پہنچ گئے ،چوہدری انعام الحق نے جلد انتقالات کے 26ورق انتقال نکال لئے ،اور دھمکی دی کہ اگر تھانہ میں کوئی کاروائی کی تو 60کروڑ روپے وصول کرے گا اور زندہ بھی نہیں چھوڑے گا ، اگلے روز صبح کے وقت ہماری آنکھوں پر پٹیاں باندھ کر نامعلوم مقام پر لے گئے ،بعد ازاں تحصیل چوبارہ کے علاقہ میں ایک ویران جگہ پر پھینک کر فرارہو گئے ، میرا شناختی کارڈ، اسلحہ لائسنس رقم اور موبائل بھی چھین لئے ، اس موقع پر قریبی جگہ پر جا کر تھانہ فتح پور پولیس کو اطلاع دی ، محمد اسلم سکھیرا نے بتایا کہ میرے اور میرے منشی کے ساتھ چوہدری انعام الحق کے ساتھیوں نے زیادتی کی ہے ، ان کے خلاف تھانہ فتح پور میں مقدمہ درج ہے ،میرے سرکاری رکارڈ کے حوالے سے بھی ان کے خلاف قانونی کاروائی کروں گا ، ہمیں انصاف فراہم کیا جائے ، اس موقع پر پٹوار ایسوسی ایشن کے عہدیدان بھی موجو د تھے ۔

اسلم سکھیرا پٹواری

Ba

مزید : ملتان صفحہ آخر