انتھک کاؤشوں کے نتیجہ میں پولیو کیسز میں نمایاں کمی آئی : اکبر جان مروت

انتھک کاؤشوں کے نتیجہ میں پولیو کیسز میں نمایاں کمی آئی : اکبر جان مروت

پشاور( سٹاف رپورٹر)صوبہ خیبرپختونخوا کے نگران وزیرصحت اکبرجان مروت نے پولیوکی کامیاب کاوشوں کوسراہتے ہوئے کہاہے کہ انتھک محنت کی بدولت پولیوکیسزمیں غیرمعمولی کمی آئی ہے اور ہمارامستقبل پولیوکے موذی مرض سے محفوظ ہورہاہے ان خیالات کااظہارانہوں نے پولیومہم کی افتتاحی تقریب سے بحثیت مہمان خصوصی خطاب کے دوران کیااس موقع پرڈائریکٹرجنرل ہیلتھ سروسز ڈاکٹرایوب روز،ڈائریکٹرای پی ائی ڈاکٹراکرم شاہ،ایمرجنسی آپریشن سنٹرکے کو آرڈینیٹر محمدعابدخان ،اے ڈی ای پی آئی ڈاکٹرتیمورشاہ،ٹیم لیڈیونیسیف ڈاکٹرجوہرخان، ڈبلیوایچ اوڈاکٹرعبدی ناصر،ٹیکنیکل فوکل پرسن بی ایم جی ایف ڈاکٹرامتیازعلی شاہ،ٹیم لیڈاین سٹاپ ڈاکٹراعجازعلی شاہ اورپی پی اے کے صوبائی صدرڈاکٹرپروفیسرڈاکٹرارشادبھی موجود تھے نگران صوبائی وزیر اکبرجان مروت نے کہاکہ 2014میں پاکستان میں پولیو کے 306کیس سامنے آئے جن میں صوبہ خیبر پختونخوا کے68کیس شامل تھے تاہم انسدادپولیوکی کامیاب، موثر اور مسلسل مہمات کے نتیجہ میں اس سال ملک بھر میں پولیو کے صرف تین کیس سامنے آئے ہیں جن میں صوبہ خیبرپختونخوا اور سابقہ فاٹا میں کوئی کیس سامنے نہیں آیا جو پولیو کے خاتمہ کی جانب ایک اہم پیش رفت ہے انہوں نے کہاکہ ایمرجنسی آپریشن سنٹرخیبرپختونخوا کے زیراہتمام محکمہ صحت، ای پی آئی ، معاون اداروں ،پولیس اورمیڈیاذرائع ابلاغ سمیت تمام شعبوں نے صوبہ خیبرپختونخوا سے پولیو وائرس کے مکمل خاتمے کے لیے قابل قدر کردار اداکیاہے بالخصوص پولیو ورکرز نے جن مشکل حالات میں گھرگھرتک پہنچ کربچوں کوپولیو قطرے پلائے وہ یقیناقابل تحسین ہے اکبرجان مروت نے بتایاکہ نگران حکومت پولیو کے مکمل خاتمے کیقومی مشن میں بھرپورتعاون کویقینی بنارہی ہے اوراس سلسلے میں ایمرجنسی آپریشن سنٹرکی تمام ترضروریات کوپوراکیاجارہاہے تاکہ اس موذی مرض کی روک تھام کویقینی بنایاجاسکے تقریب سے خطاب کرتے ہوئے ایمرجنسی آپریشن سنٹرخیبرپختونخواکے کو آرڈینیٹرمحمدعابدخان نے کہاکہ پولیوکاخاتمہ کسی بڑے چیلنج سے کم نہیں اورحکومت نے ہر صورت میں پولیوکے مکمل خاتمے کا تہیہ کررکھا ہے جس کے لیے تمام دستیاب وسائل کوبروئے کارلایاجارہاہے ڈائریکٹر ای پی آئی ڈاکٹراکرام شاہ نے پولیوکے خاتمے کی کاوشوں کی کامیابی میں صحافیوں کے تعاون کو سراہتے ہوئے کہا کہاس موذی مرض کے خلاف والدین سمیت معاشرے کے تمام طبقات میں شعور و آگاہی اجاگر کرنے میں میڈیا کا کردار انتہائی اہمیت کا حامل ہے انہوں نے کہا کہ صوبہ بھرمیں 15اکتوبرسے خسرہ کے بچاو کی 12 روزہ مہم کاآغازکیاجارہاہے جس کے لیے تمام انتظامات مکمل کئے ہیں مہم کے دوران 44لاکھ بچوں کوخسرے سے بچاوکے ٹیکے لگائے جائینگے اس مہم کے سلسلے میں میڈیااپنابھرپورتعاون ادا کریں تقریب سے پرو فیسرڈاکٹرارشاد،پروفیسرڈاکٹرحمید، پروفیسرڈاکٹراشفاق اورپروفیسرڈاکٹرامین جان گنڈاپورنے بھی خطاب کیامقررین کاکہناتھاکہ بیماریوں سے عدم آگا ہی کے سبب اموات واقع ہوتی ہیں عوام میں شعورآجاگرکرکے ان بیماریوں سے بچناممکن ہے خیبرپختونخوا کے 16اضلاع میں شروع ہونے والی انسداد پولیو مہم 9اگست تک جاری رہے گی جس کے دوران 36لاکھ سے زائدبچوں کو پولیوسے بچاؤ کے قطرے پلائے جائیں گے ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر