ٹیکسلا،پختون برادریوں کا پنجابی پختون اتحاد کی تنظیم پرعدم اعتماد کااظہار

ٹیکسلا،پختون برادریوں کا پنجابی پختون اتحاد کی تنظیم پرعدم اعتماد کااظہار

ٹیکسلا(نمایندہ خصوصی)تحصیل ٹیکسلا کی مختلف پختون برادریوں کے سربراہان نے چند دن قبل بننے والی پنجابی پختون اتحاد کی تنظیم پر عدم اعتمام کا اظہارکر دیا، پختون برادریوں کے سرکردہ راہنماؤں نے حاجی قدیم خان لالہ ہمایوں پر عدم اعتماد اور حاجی ناظم خان پر اعتماد کا اظہار کر دیا، تحصیل ٹیکسلا کی مختلف پختون برادریوں کے سربراہان جن میں حاجی اسداللہ خان تحصیل ٹیکسلا ،فدا خان بنگش ٹیکسلا،لال زادہ خان وارڈ نمبر7واہ کینٹ،صالح محمد خان، زادق خان حسن ابدال، ملک نجیب منیر آباد، حاجی ظلمی خان آصف آباد، یعقوب خان احمد نگر ،رحمن خان ڈھوک گجر، جمعہ خان گٹیا روڈ، ظفر خان باجوڑی اے سی واہ، ڈھوک پٹھان، حاجی حکیم خان ،تاج محمد خان سادات کالونی ایچ ایم سی روڈ، رحمن خان، تاج خان، شاہ زمین خان، گل خان پنڈ گوندل ٹیکسلا،نے ایک ہنگامی پریس کانفرنس مین کہا ہے کہ چند دن قبل معرض وجود میں آنے والی پنجابی پختون اتحاد کی تنظیم کو ہم مسترد کرتے ہیں یہ تنظیم مختلف پختون و پنجابی برادریوں کو اعتماد میں لئے بغیر بنائی گئی ہے، ہم ناظم خان پر اعتماد کا اظہار کرتے ہین اور بہت جلد تحصیل ٹیکسلا حسن ابدال ،ترنول سمیت راوپلنڈی اسلام آباد پختون برادریوں اور پنجابی سرکردہ راہنماؤں کی باہمی مشاورت سے نئی تنظیم کا اعلان کرینگے،انھوں نے کہا کہ جو تنظیم بنائی گئی نہ تو تمام پختون برادری کو اعتماد میں لیا گیا اور نہ ہی اس تنطیم کو تمام پختونوں کی حمایت حاصل ہے اس لئے ہم خود ساختہ تنظیم کو نہیں مانتے اور اسکو مسترد کرتے ہیں۔، اس موقع پر حاجی اسدااللہ خان نے کہا کہ میں تحسیل ٹیکسلا کی پختون برادریوں کو لیڈ کر رہا ہوں مجھے بھی اس تنظیم کا علم نہیں ہے، لال ذادہ خان نے کہا کہ ہم نے لویہ جرگہ میں باہمی مشاورت سے جو نام دئیے تھے اور تمام پختون برادریوں نے اسکی تائید کی تھی اسے پس پشت ڈالکر من پسند افراد کو عہدے دیکر تنظیم کا قیام عمل میں لایا گیا جو کہ پختون برادریوں کو درمیان نااتفاقی ڈالنے کے مترادف ہے انشااللہ بہت جلد ہم نئے لائحہ عمل کا اعلان کرینگے۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر