اسرائیلی فوج نے ماہ جولائی میں فلسطینیوں کی 32املاک مسمارکیں 

اسرائیلی فوج نے ماہ جولائی میں فلسطینیوں کی 32املاک مسمارکیں 
اسرائیلی فوج نے ماہ جولائی میں فلسطینیوں کی 32املاک مسمارکیں 

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

واشنگٹن(اے این این)فلسطین میں انسانی حقوق کے لیے کام کرنے والے اداروں نے اپنی رپورٹس میں بتایا ہے کہ صہیونی حکام کی طرف سے فلسطینیوں کے خلاف نسل پرستانہ کارروائیاں جاری ہیں۔

غیرملکی میڈیا کے مطابق القدس سٹڈی سینٹر برائے اسرائیل وفلسطینی امور کی طرف سے جاری ایک رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ جولائی کے دوران صہیونی فوج نے فلسطینیوں کی 32 املاک جن میں گھر، دکانیں اور دیگر عمارات شامل ہیں مسمار کر دیں۔ مکانات مسماری کا سلسلہ غرب اردن، بیت المقدس، اندرون فلسطین اور شمالی اور جنوبی فلسطینی علاقوں میں جاری رہا۔صہیونی فوج نے العراقیب گاؤں جولائی میں ایک بار پھر مسمار کر کے مسماری کا 131 بار ریکارڈ مکمل کیا گیا۔ اس کے علاوہ الاخان الاحمر اور ابو النوار البدوی گاں بھی مسمار کیے گئے۔رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ گذشتہ برسوں کی نسبت فلسطین میں یہودی آباد کاری کے ساتھ ساتھ فلسطینیوں کی املاک کی مسماری میں مسلسل اضافہ ہو رہا ہے۔

مزید : بین الاقوامی