وہ جگہ جہاں امریکہ نے اپنے سب سے بڑے دشمن القاعدہ کے ساتھ اتحاد کر لیا ، تہلکہ خیز خبر آگئی

وہ جگہ جہاں امریکہ نے اپنے سب سے بڑے دشمن القاعدہ کے ساتھ اتحاد کر لیا ، تہلکہ ...
وہ جگہ جہاں امریکہ نے اپنے سب سے بڑے دشمن القاعدہ کے ساتھ اتحاد کر لیا ، تہلکہ خیز خبر آگئی

  

واشنگٹن(نیوز ڈیسک) بظاہر تو یوں نظر آتا ہے کہ اس دنیا میں دہشت گردی کا سب سے بڑا دشمن امریکا ہی ہے لیکن کیسی حیرت کی بات ہے کہ دنیا بھر میں دہشت گردوں سے جنگ کرنے والے امریکا نے مشرق وسطٰی کے خطے میں شدت پسند تنظیم القاعدہ سے اتحاد کر لیا ہے۔

نیوز ویب سائٹ ’’کامن ڈریمز‘‘ کے مطابق خبر رساں ایجنسیوں کا کہنا ہے کہ یمن میں امریکہ اور برطانیہ کاحمایتی عرب اتحاد القاعدہ کے جنگجوؤں کی بھرتی کر رہا ہے۔ تین سال قبل اس اتحاد کی جانب سے حوثی باغیوں پر حملوں کا آغاز ہوتے ہی یہ خبریں سامنے آنے لگی تھیں کہ القاعدہ کے جنگجو بھی ان کے ساتھ مل کرایران حمایت یافتہ حوثی باغیوں کے خلاف لڑ رہے ہیں۔

اب ایسوسی ایسٹڈ پریس کی جانب سے کی گئی تحقیقات میں یہ تہلکہ خیز بات سامنے آئی ہے کہ امریکی حمایت یافتہ عرب اتحاد نے القاعدہ جنگجوؤں کے ساتھ خفیہ معاہدے کر رکھے ہیں۔ ان معاہدوں کے تحت بعض علاقے دہشت گردوں سے خالی کروائے گئے ہیں اور بعض جگہوں سے انہیں ہتھیاروں اور لوٹ کے مال کے ساتھ جانے کی اجازت دی گئی ہے۔ ان خفیہ معاہدوں کے علاوہ القاعدہ کے جنگجوؤں کو بھرتی بھی کیا جا رہا ہے، جسے تجزیہ کاروں نے سب سے زیادہ خطرناک عمل قرار دیا ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس