قومی سلامتی کمیٹی کا اجلاس، بھارت کے ساتھ سفارتی تعلقات میں کمی، تجارت معطل، مسلح افواج کو تیار رہنے کی ہدایت، اعلامیہ جاری کردیا گیا

قومی سلامتی کمیٹی کا اجلاس، بھارت کے ساتھ سفارتی تعلقات میں کمی، تجارت معطل، ...
قومی سلامتی کمیٹی کا اجلاس، بھارت کے ساتھ سفارتی تعلقات میں کمی، تجارت معطل، مسلح افواج کو تیار رہنے کی ہدایت، اعلامیہ جاری کردیا گیا

  


اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) وزیر اعظم عمران خان کی زیر صدارت قومی سلامتی کمیٹی کے اجلاس میں بھارت کے ساتھ تعلقات اور کشمیر کے معاملے پر اہم فیصلے کرلیے گئے۔

قومی سلامتی کمیٹی کے اجلاس کا پانچ نکاتی اعلامیہ جاری کردیا گیا ہے۔وزیر اعظم عمران خان کی زیر صدارت قومی سلامتی کمیٹی نے فیصلہ کیا ہے بھارت کے ساتھ سفارتی تعلقات کم ترین سطح پر لائے جائیں گے۔ قومی سلامتی کمیٹی نے فیصلہ کیا ہے کہ بھارت کے ساتھ باہمی تجارت کو معطل کردیا جائے گا۔

اجلاس میں یہ فیصلہ بھی کیا گیا کہ پاکستان اور انڈیا کے مابین ہونے والے دو طرفہ معاہدوں کا از سر نو جائزہ لیا جائے گا۔ مسئلہ کشمیر کو اقوام متحدہ کی سکیورٹی کونسل میں لے جایا جائے گا اور عالمی فورمز پر مسئلہ کشمیر کو بھرپور طریقے سے اجاگر کیا جائے گا۔ قومی سلامتی کمیٹی نے فیصلہ کیا ہے کہ یوم آزادی 14 اگست کو کشمیریوں کے ساتھ یوم یکجہتی کے طور پر منایا جائے گا اور 15 اگست کو ملک بھر میں یوم سیاہ منایا جائے گا۔

وزیر اعظم نے ایل او سی پر مسلح افواج کو تیار رہنے کی ہدایت کردی ہے اور ہدایت کی ہے کہ بھارت کی کسی بھی شرارت کا منہ توڑ جواب دیا جائے۔

مزید : Breaking News /اہم خبریں /قومی /دفاع وطن