سٹاک مارکیٹ میں تیزی، انڈیکس 283پوائنٹس بڑھ گیا، ڈالر 10پیسے سستا، سونا ایک لاکھ تیس ہزار روپے فی تولہ تک پہنچ گیا 

  سٹاک مارکیٹ میں تیزی، انڈیکس 283پوائنٹس بڑھ گیا، ڈالر 10پیسے سستا، سونا ایک ...

  

 کراچی (اکنامک رپورٹر)پاکستان اسٹاک  ایکس چینج میں کاروباری ہفتہ کے چوتھے روزجمعرات کو بھی کاروبار حصص میں تیزی رہی  اورسرمایہ کاروں کی جانب سے سرگرم شیئرز کی خریداری میں دلچسپی دیکھی گئی۔کاروبار حصص میں تیزی کے سبب ایک موقع پر کے ایس ای 100 انڈیکس 40400کی نفسیاتی سطح کو بھی عبور کرگیا لیکن ٹیلی کام،پاور اور سیمنٹ سیکٹر میں منافع کے حصول کیلئے سرمایہ کاروں کی جانب سے شیئرز کی فروخت کے سبب 544پوائنٹس کی تیزی تک پہنچنے والی مارکیٹ  283پوائنٹس تک محدود رہ گئی۔100 انڈیکس 39900،40000اور 40100پوائنٹس کی نفسیاتی حدوں کو عبور کرگیا۔ کاروبار میں تیزی کے باعث مارکیٹ میں سرمایہ کاروں کو63ارب روپے سے زائد کا فائدہ ہوا۔پاکستان اسٹاک  ایکس چینج میں جمعرات کو کاروبا ر کا آغازمثبت زون میں ہوا اورسرمایہ کاروں نے ٹیلی کام، سیمنٹ، پاور،کمیونیکیشن،بینکنگ اور اسٹیل سیکٹر ز میں خریداری کی جس کی وجہ سے انڈیکس کاروبار کے دوران40426پوائنٹس کی بلند سطح پر بھی پہنچاتاہم شیئرز مارکیٹ میں کاروبار کے اختتام پر کے ایس ای100انڈیکس میں 283.34پوائنٹس کی تیزی سے40166.12پوائنٹس پرپہنچ گیا اسی طرح کے ایس ای30انڈیکس126.85پوائنٹس بڑھ کر17424.56پوائنٹس پر بند ہوا۔کے ایس ای آل شیئرز انڈیکس260.16پوائنٹس  بڑھ کر 28073.68پوائنٹس اورکے ایم آئی30انڈیکس477.10پوائنٹس کے اضافے سے64310.12  پوائنٹس ہو گیا۔تیزی کے سبب مارکیٹ سرمائے میں 63ارب77کروڑ34لاکھ 20ہزار317روپے کا اضافہ ہوگیا اور مارکیٹ کا مجموعی سرمایہ 74کھرب32ارب10کروڑ39ہزار432روپے تک پہنچ گیا۔جمعرات کو مارکیٹ میں 82کروڑ68لاکھ8ہزار981 حصص کے سودے ہوئے جبکہ بدھ کو مارکیٹ میں 50کروڑ19لاکھ45ہزار551شیئرز کا کاروبار ہوا تھا۔جمعرات کو مجموعی طور پر415کمپنیوں کا کاروبارہوا جس میں سے234کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں اضافہ،166میں کمی اور15کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں استحکام رہا۔کاروبار کے لحاظ سے ورلڈ ٹیلی کام 24کروڑ28لاکھ شیئرز،پاور سیمنٹ4کروڑ53لاکھ، میپل لیف 3کروڑ84لاکھ، کے الیکٹرک لمٹیڈ3کروڑ77لاکھ,ٹی آر جی پاک لمیٹڈ3کروڑ4لاکھ اورعائشہ اسٹیل ملز2کروڑ50لاکھ حصص کے سودوں سے سرفہرست رہے۔ قیمتوں میں اتار چڑھاؤ کے اعتبار سے رفحان مائزکے حصص کی قیمت میں 350روپے بڑھ کر8300روپے اورپاک ٹیلی کام کے حصص کی قیمت44.99روپے بڑھ کر1656روپے پر جا پہنچی اور جن کمپنیوں کے حصص کی قیمتوں میں نمایاں کمی رہی ان میں محمود ٹیکسٹائل اورسفائر فائبر شامل تھیں جن کے دام40.15روپے اور30روپے کی کمی سے بالترتیب495.30روپے756روپے رہ گئے۔نٹر بینک میں روپے کے مقابلے ڈالر کی قدر میں کمی کا رجحان رہا جبکہ مقامی اوپن کرنسی مارکیٹ میں ڈالر کی قدر مستحکم رہی۔فاریکس ایسوسی ایشن آف پاکستان کی رپورٹ کے مطابق جمعرات کو انٹر بینک میں روپے کے مقابلے ڈالر کی قدر میں 10پیسے کی کمی ریکارڈ کی گئی جس سے ڈالر کی قیمت خرید 168.30روپے سے کم ہو کر168.20روپے اور قیمت فروخت168.60روپے سے کم ہو کر 168.50روپے ہو گئی تاہم مقامی اوپن کرنسی مارکیٹ میں ڈالر کی قیمت خرید 168روپے اور قیمت فروخت168.50روپے پر برقرار ہی۔فاریکس رپورٹ کے مطابق یورو کی قدر میں 2روپے کا اضافہ ریکارڈ کیا گیا جس سے یوروکی قیمت خرید 196روپے سے بڑھ کر198روپے اور قیمت فروخت198روپے سے بڑھ کر200روپے ہو گئی جبکہ2.50روپے کے نمایاں اضافے سے برطانوی پونڈ کی قیمت خرید217.50روپے سے بڑھ کر220روپے اور قیمت فروخت219.50روپے سے بڑھ کر222روپے کی بلند ترین سطح پر جا پہنچی۔ملک بھر کی صرافہ مارکیٹوں میں ایک تولہ سونا تاریخ کی بلند ترین سطح 1لاکھ30ہزار روپے کی قریب جا پہنچی۔آل پاکستان سپریم کونسل جیولرز ایسوسی ایشن کی رپورٹ کے مطابق جمعرات کو عالمی مارکیٹ میں فی اونس سونا 9ڈالر کے اضافے سے2050ڈالر ہو گیا جس کے بعد ملکی صرافہ مارکیٹوں میں ایک تولہ سونا800روپے کے اضافے سے1لاکھ29ہزار500روپے اور دس گرام سونا685روپے کے اضافے سے 1لاکھ11ہزار25روپے پر جا پہنچا۔

سٹاک مارکیٹ

مزید :

صفحہ آخر -