وفاقی حکومت کا 27قیمتی سرکاری جائیدادیں نیلام کرنے کا فیصلہ

  وفاقی حکومت کا 27قیمتی سرکاری جائیدادیں نیلام کرنے کا فیصلہ

  

اسلام آباد(سٹاف رپورٹر)وفاقی حکومت نے نج کاری پروگرام کے تحت مختلف سرکاری محکموں کی27 قیمتی جائیدادیں نیلام کرنے کا فیصلہ کیا ہے جس سے کم از کم 6ارب 62 کروڑ روپے آمدن متوقع ہے۔ نجی ٹی وی کے  مطابق وزارت نجکاری حکام کا کہنا ہے کہ ان سرکاری جائیدادوں کی نیلامی کے لئے بولی 7 ستمبر2020 سے 28 ستمبر 2020 کے دوران ہوگی۔ مختلف سرکاری محکموں کی جائیدادوں کی نیلامی سے کم ازکم 6 ارب 62 کروڑ روپے آمدن متوقع ہے۔اس فہرست میں اراضی،اپارٹمنٹس، دکانیں اورعمارتیں بھی شامل ہیں۔ حکام کا کہنا ہیکہ تعمیراتی مقاصدکیلئے خریداری پرذرائع آمدن نہیں پوچھیجائیں گے۔کمیشن کی جانب سے جاری فہرست میں وزارت صنعت کی لاہورمیں 41 کنال پراپرٹی کی قیمت 5 ارب سے زیادہ مقررکی گئی ہے۔سول ایوی ایشن کی 123 کنال پراپرٹی بھی نیلام ہوگی،یہ پراپرٹی نواب شاہ، رحیم یار خان، وہاڑی میں واقع ہے۔اس کیعلاوہ ایرا کی اسلام آباد، لاہور، ہری پور میں 15 مختلف جائیدادیں فروخت کرنے کافیصلہ کیا گیا ہے۔ ایف بی آر، آبی وسائل، ٹریڈنگ کارپوریشن کی پراپرٹی بھی برائے نیلام ہوگی۔ایف بی آر کی فیصل آباد میں 15 کنال اراضی کی ریزرو پرائس 64 کروڑروپیمقرر کی گئی ہے۔واضح رہے کہ  نجکاری کمیشن یا متعلقہ سرکاری محکموں کیافراد بولی میں  میں حصہ نہیں لے سکیں گے۔

وفاقی حکومت

مزید :

صفحہ اول -