ملک دشمن طاقتوں کو شکست دینے کیلئے مسلمانوں کا اتحاد موثر ہتھیار،مقررین 

  ملک دشمن طاقتوں کو شکست دینے کیلئے مسلمانوں کا اتحاد موثر ہتھیار،مقررین 

  

 ملتان(سپیشل رپورٹر ) مجلس  وحدت مسلمین پاکستان کے زیر اہتمام شہید قائد عارف حسین الحسینی کی 32ویں برسی کے سلسلے میں بین الاقوامی رائے ولایت و شہدائے وطن و کشمیرکانفرنس جامعہ شہید مطہری میں منعقد ہوئی۔تقریب  سے خطاب  کرتے ہوئے (بقیہ نمبر31صفحہ6پر)

 مقررین نے کہا کہ مسئلہ کشمیر پر عالم اسلام کی طرف سے دو ٹوک  موقف اختیار کرنے کاوقت آگیا ہے۔امت مسلمہ کواپناسکوت توڑ کر بھارتی مظالم کے خلاف آواز بلند کرنا ہوگی۔مسلمانوں کے خلاف عالمی استعماری قوتوں کا ایجنڈا واضح ہو چکا ہے۔طاغوت کو شکست دینے کے لیے مسلمانوں کا سب سے موثر ہتھیار  ان  کا اتحادواخوت ہے۔  ایک دوسرے کے عقائد کا احترام کر کے دشمنوں کے ناپاک عزائم کو خاک میں ملایا جا سکتا ہے۔مجلس وحدت مسلمین پاکستان کے مرکزی سیکرٹری جنرل علامہ راجہ ناصر عباس جعفری نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہم کشمیر،شام،فلسطین اور یمن سمیت دنیا بھرکے مظلومین کے ساتھ ہیں۔مودی حکومت کی نہتے کشمیریوں  پر ظلم و بربریت بنیادی انسانی حقوق کی تذلیل اورقابل مذمت ہے۔ انہوں نے کہا کہ شہید قائد کاکرداران کی گفتار کا ترجمان تھا۔انہوں نے اپنے عمل سے اپنے پاکیزہ اور اعلی کردار کو منوایا۔انہوں  نے کہا کہ عزاداری سید الشہدا ہماری رگ حیات ہے۔عزاداری پر کبھی کوئی آنچ نہیں آنے دیں گے۔ عزاداری کو محدود کیے بغیر ایس او پیز پرعمل کرتے ہوئے ایک مہذب قوم ہونے کا ثبوت دیا جائے۔انہوں نے کہاکہ اپنے مقدسات اور بنیادی عقائد پر کسی کو  انگلی اٹھانے کی اجازت نہیں دیں گے۔ قائدواقبال کے مسلم  پاکستان کو مسلکی پاکستان بنانے والے ناکام ہوں گے۔یہ مادر وطن شیعہ سنی قوتوں نے مل کربنایا ہے یہ کسی مسلک کی جاگیر نہیں ہے۔انہوں نے کہاجو قوتیں فروعی اختلافات کو لڑائی میں بدلنا چاہتی ہیں وہ شدت پسندانہ رجحانات کی حامل اور ملک وقوم کے امن کی دشمن ہیں۔ملت تشیع اتحادواخوت کے داعی ہیں۔مجلس وحدت مسلمین نے باہمی اخوت و احترام کو تقویت دی ہے۔انہوں نے لبنا ن میں ہونے والے حالیہ جانی نقصان پر شدید افسوس کااظہار کیا۔۔انہوں نے کراچی میں جماعت اسلامی کی کشمیر ریلی پر کریکر دھماکے کی مذمت بھی کی۔دیگر مقررین نے کہا کہ اہلسنت برادران کی عزت وتکریم ہمیں اپنی عزت و تکریم کی طرح عزیز ہے۔جس طرح قیام پاکستان کے لیے شیعہ سنی برادران نے مل کر جدوجہد کی اسی طرح ارض پاک کی سالمیت وبقا کے لیے بھی ہم نے مل کر رہنا ہے۔امریکہ واستعماری قوتوں کی یہ کوشش ہے کہ پاکستان کے مسلمانوں کو اختلافات میں الجھا کر انہیں دست و گریباں کیا جائے۔تحفظ بنیاد اسلام بل اسی سازش کی ایک کڑی ہے۔ اپنے اتحاد کی طاقت سے ان اسلام اور ملک دشمنوں کو شکست دینا ہو گی۔شہید قائدعارف حسینی کے فرزند حسین حسینی نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ شہید  قائد کے افکار کو زندہ رکھنے کی ضرورت ہے۔ملک وقوم کے وسیع تر مفاد میں مشترکہ جدوجہد اوراتحاد واخوت  قائدکے افکار کا خاصاہے۔مظلوم کشمیریوں کے لیے شہید قائد کی جدوجہد کسی سے ڈھکی چھپی نہیں۔انہوں نے ہمیشہ مظلومین جہاں کے لیے اپنی آواز بلندرکھی،بھارت اور اسرائیل ایک ہی سکے کے دورخ ہیں۔۔شہید سے تجدید عہد کرتے ہیں کہ کشمیر،فلسطین اور دنیا بھر کے مظلومین کی حمایت ہر حال میں جاری رکھیں گے۔ تقریب سے دیگر مقررین نے بھی خطاب کیا۔

مقررین

مزید :

ملتان صفحہ آخر -