قبل ازوقت ڈیلیوری،نامولود ماں کے پیٹ میں جاں بحق 

  قبل ازوقت ڈیلیوری،نامولود ماں کے پیٹ میں جاں بحق 

  

 جودھ پور (نمائندہ پاکستان) پیسوں کی لالچ میں قبل از وقت ڈیلیوری کرنے کی کوشش پرنومولود ماں کے پیٹ میں ہلاک ہوگیاحالت غیر ہونے پر ہسپتال بھیج دیا،اہلیان علاقہ کا احتجاج،کاروائی کا مطالبہ،قسور عباس۔تفصیل کے مطابق نواحی علاقہ چاہ پیرے والا موضع (بقیہ نمبر32صفحہ6پر)

چک حیدر آباد حدود تھانہ نواں شہر کبیروالا کا رہائشی قسور عباس ولد منظور حسین جٹ نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے بتایا کہ کچھ دن قبل میں اپنی بیوی رقیہ مائی کو ڈیلیوری قریب ہونے کی وجہ سے بنیادی مرکز صحت چتوڑ گڑھ لے کر گیا مگر عید کی چھٹیوں کی وجہ سے ڈاکٹر نہ ہونے کی وجہ سے ارشاد یاسمین LHVچتوڑ گڑھ سے رابطہ کیا تو اس نے کہا کہ آپ میرے گھر نواں شہر آجائیں،تقریبا دن 12بجے ان کے گھر پہنچے چیک اپ کرنے کے بعد ارشاد یاسمین نے کہا کہ آپ کی ڈیلیوری فوری کرنی پڑتی ہے آپ تسلی رکھیں میں ابھی مسئلہ حل کرتی ہوں اس نے فوری طر پر انجکشن اور ڈرپ لگا دی وقت گزرنے کے ساتھ ساتھ مریضہ رقیہ مائی کی طبیعت بگڑنے لگی LHVسے بار بار پوچھنے پر بچہ پیدا نہ ہوا اور نہ ہی اس نے ہمیں کہیں جانے دیا چار گھنٹے گزرنے کے بعد مریضہ کی طبیعت انتہائی خراب ہوگئی تو مذکورہ LHVنے کہا کہ میں نے سرتوڑ کوشش کی ہے اب آپ کسی ڈاکٹر کے پاس لے جائیں اور اب آپ کے بچے کی حرکت بھی نہیں رہی ہے،مریضہ کو دیکھتے ہوئے میں اور میرے کزن خضر حیات اور احسن اس کو قریبی ہسپتال انور شہزاد کے پاس لے گئے جس سے مریضہ کو چیک اپ کے بعد داخل کرنے سے انکار کر دیا ڈاکٹر انور شہزاد نے کہا کہ بچے کی موت واقع ہوچکی ہے اور مریضہ کی حالت بھی خطرے سے باہر ہے،کافی منت سماجت کے بعد چھوٹے آپریشن کے ساتھ مردہ حالت میں بچہ پیدا ہوا اور مریضہ کو فوری طور پر نشتر ہسپتال ملتان لے جانے کو کہا تین دن نشتر ہسپتال میں علاج معالجہ کے بعد مریضہ کی طبیعت سنبھل گئی بچے کے والد قسور عباس نے کہا کہ ارشادیاسمین LHVنے زبردستی بچہ پیدا کرنے اور پیسوں کے لالچ میں میرا بچہ مار دیا ہے اہلیان علاقہ نے شدید احتجاج کیا اور اعلی حکام سے نوٹس کی اپیل کی ہے اس بارے جب ارشاد یاسمین LHVسے مؤقف لیا گیا تو اس نے کہا کہ میرے پاس آئے ضرور تھے مگر وہاں سے چلے گئے ڈیلیوری میں نے نہیں کی۔ 

مزید :

ملتان صفحہ آخر -