راوی اربن ڈویلپمنٹ منصوبے میں کتنے درخت لگائے جائیں گے ؟وزیراعظم نے شاندار اعلان کردیا

راوی اربن ڈویلپمنٹ منصوبے میں کتنے درخت لگائے جائیں گے ؟وزیراعظم نے شاندار ...
راوی اربن ڈویلپمنٹ منصوبے میں کتنے درخت لگائے جائیں گے ؟وزیراعظم نے شاندار اعلان کردیا

  

لاہور(ڈیلی پاکستان آن لائن )وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ دوسال مشکل گزارے، ہرجگہ این آر او کا مجمع اکٹھا ہوجاتا ہے، این آر اووالے شورمچاتے کہ این آر او دو گے تو فیٹف اورکشمیرایشو میں سپورٹ کریں گے لیکن ڈویلپمنٹ اور روزگاردینے کا وقت آگیا ہے,راوی اربن ڈیویلپمنٹ منصوبہ نا گزیر ہو چکا ہے ،لاہور کو بچانا ہے تو راوی منصوبہ بنانا ہو گا ،یہ منصوبہ نہ بنا تو لاہور کا حال کراچی جیسا ہو گا,پروگرام سے معیشت کا پہیہ چل پڑے گا, راوی اربن ڈویلپمنٹ منصوبے پر 50ہزار ارب روپے لاگت آئے گی،نئے بننے والے شہر کے ارد گرد 60لاکھ درخت اگائیں گے ،اس شہر کی عمارتیں اونچی ہونگی ۔

راوی اربن ڈویلپمنٹ اتھارٹی کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئےوزیر اعظم عمران خان نے کہا کہ دریا ئے راوی اپنی خوبصورتی میں اپنی مثال آپ تھا جو اب سکڑکر سیوریج نالہ بن چکا ہے، ہماری حکومت نے مشکل منصوبہ راوی ریور فرنٹ اربن ڈویلپمنٹ پراجیکٹ  کو پایہ تکمیل تک پہنچانے کا بیڑا اٹھا لیا ہے، یہ پراجیکٹ لاہور کو بچانے کا منصوبہ ہے، اس سے زیر زمین پانی کی سطح بلند ہوگی اور آنے والے دنوں میں لاہور کو کراچی جیسے خطرناک مسائل کا سامنا نہیں کرنا پڑے گا۔وزیر اعظم نے کہا کہ اس وقت ضرورت ہے کہ ایک ایسا شہر بنایا جائے جو جدید طرز کا ہو جس میں تمام سہولیات موجود ہوں اور وہ منصوبہ بندی کے تحت بنایا جائے، راوی سٹی اسلام آبادکے بعد پاکستان کا دوسرا منصوبہ بندی والا شہر ہے جس میں 13شہر آباد ہوں گے جبکہ ایک کلومیٹر وسیع اور 46کلومیٹر لمبی جھیل بھی اس میں شامل ہوگی، مذکورہ پراجیکٹ 1لاکھ 10ہزار ایکٹر پر محیط ہو گا جسے آلودگی سے پاک کرنے کیلئے 60لاکھ پودے لگائے جائیں گے جبکہ شہر کے گندے نالوں کے پانی کو ٹریٹ کر کے دریا میں چھوڑا جائے گا جس سے پانی کی زیر زمین سطح بلند ہو گی، ایک زمانہ تھا کہ لاہور کا پانی میٹھا ہوتا تھا ہم نلکے سے پانی پیتے تھے ،لاہور کی آب و ہوا آلودہ نہیں ہوتی تھی ،15سال میں لاہور کا پانی 800فٹ نیچے چلا گیا،اب دریائے راوی ایک نالہ بن کر ر ہ گیا ہے ،ہم سیورج کا پانی صاف کر کے دریائے راوی میں ڈالیں گے۔

وزیر اعظم عمران خان نےکہا کہ  راوی سٹی لاہور کو بچانے کا 50ہزار ارب روپے کا منصوبہ ہے جس میں پرائیوٹ پارٹنر شپ بھی شامل ہے، اوورسیز پاکستانی جن کا ہمیشہ پاکستان پرشکوہ رہتا ہے یہ ان کے لئے بہتر کارگر منصوبہ ہوگا،انہیں چاہیے کہ وہ اس میں سرمایہ کاری کریں،اوور سیز پاکستانیوں کے لیے اس منصوبے میں بہترین مواقع ہیں،سمندر پار پاکستانیوں کو سرمایہ کاری کے لیے مواقع دئیے جائیں گے ۔

وزیر اعظم عمران خان نے کہا کہ اس منصوبے سے پاکستان میں سرمایہ آئے گا اور ملک خوشحال ہو گا جبکہ اس پیسے سے ہم اپنے اوپر واجب الادا قرضے کو بھی اتار سکیں گے، اس منصوبے سے آنے والے سرمایہ کو صحت  تعلیم اور احساس پروگرام کے ذریعے غریب عوام پر خرچ کریں گے، یہ ایک مشکل منصوبہ ہے جس کیلئے بڑی محنت درکار ہے اور یقینا مشکلات بھی آئیں گی، اگر یہ منصوبہ اتنا آسان ہو تا تو 2004سے گزشتہ دور تک کی حکومتیں اس کو بنا چکی ہوتیں جبکہ سابق حکمرانوں نے اورنج لائن، میٹرو بس چلا کر 28ارب روپے کی سالانہ سبسڈیز دیں جس سے ملک مقروض ہوتا چلا گیا جبکہ راوی سٹی پراجیکٹ سے ملک میں پیسہ آئے گا اور ملک خوشحال ہو گا۔ان کا کہنا تھا کہ کنسٹرکشن کمپنی کے ساتھ 40صنعتیں چلیں گی،اس پراجیکٹ سے لوگوں کو روز گار ملے گا،اس پراجیکٹ کے ساتھ ساتھ نیا پاکستان ہاؤسنگ پراجیکٹ اور دیگر رفاعی منصوبے بھی چلتے رہیں گے۔

تقریب میں وزیر اعظم عمران خان کے ہمراہ وفاقی وزیر اطلاعات شبلی فراز، وزیر اعلی پنجاب سردار عثمان بزدار،وفاقی وزیر حماد اظہر، شہزاد اکبر، چیئرمین راوی پراجیکٹ راشد عزیز، وفاقی و صوبائی وزرا، ممبران قومی و صوبائی اسمبلی بھی اس موقع پر موجود تھے۔اس موقع پر وزیر اعظم کو منصوبہ بارے تفصیلی بریفنگ بھی دی گئی جبکہ وزیر اعظم نے منصوبہ کا باقاعدہ افتتاح بھی کیا۔ 

مزید :

قومی -