”مجھے پاکستان جانے میں کوئی مسئلہ نہیں“ انگلینڈ کے دورہ پاکستان کے مثبت اشارے ملنے لگے، انگلش ٹیم کی اہم شخصیت نے رضامندی ظاہر کر دی

”مجھے پاکستان جانے میں کوئی مسئلہ نہیں“ انگلینڈ کے دورہ پاکستان کے مثبت ...
”مجھے پاکستان جانے میں کوئی مسئلہ نہیں“ انگلینڈ کے دورہ پاکستان کے مثبت اشارے ملنے لگے، انگلش ٹیم کی اہم شخصیت نے رضامندی ظاہر کر دی

  

مانچسٹر (ڈیلی پاکستان آن لائن) انگلینڈ سے دورہ پاکستان کے مثبت اشارے ملنے لگے ہیں اور ہیڈ کوچ کرس سلورووڈ نے کہا ہے کہ مجھے وہاں جانے میں کوئی مسئلہ نہیں ہے، ہمارے بیٹسمین بھی پاکستانی وکٹوں پر کھیلنے کی خواہش رکھتے ہیں، البتہ ٹور کا فیصلہ بورڈ کوہی کرنا ہے۔

تفصیلات کے مطابق انگلش ٹیم کو ایف پی ٹی کے تحت 2022 میں پاکستان کا ٹور کرنا ہے، پی سی بی کے چیف ایگزیکٹیو وسیم خان نے گزشتہ دنوں خواہش ظاہر کی تھی کہ ای سی بی اس سے قبل مختصر ٹور کیلئے بھی ٹیم بھیجے جس کے جواب میں کچھ مثبت اشارے ملنا شروع ہوگئے ہیں اور سب سے پہلے انگلش ٹیم کے ہیڈ کوچ سلورووڈ نے دورہ پاکستان کے حوالے سے رضامندی ظاہر کرتے ہوئے مثبت بیان جاری کیا ہے۔ 

انہوں نے کہا کہ میرے لئے یہ خوشی کی بات ہے کہ پاکستان ٹور کے حوالے سے بات چیت پھر سے شروع ہوگئی، ہم بھی وہاں واپس جانے کے منتظر ہیں، ذاتی طور مجھے دورے پرکوئی مسئلہ نہیں ہے کیونکہ میں کبھی وہاں نہیں گیا اس لئے جانا چاہتا ہوں، اس ملک کو دیکھنا بہت شاندار ہوگا، میں جانتا ہوں کہ ہمارے بیٹسمین بھی پاکستانی وکٹوں پر بیٹنگ کے خواہاں ہیں، البتہ اس حوالے سے حتمی فیصلہ بہرحال بورڈکو ہی کرنا ہے۔

یاد رہے کہ انگلینڈ نے 06-2005ءکے بعد سے پاکستان کاکوئی ٹور نہیں کیا،اس دوران پاکستانی ٹیم اپنے ہوم میچز یو اے ای میں کھیلتی رہی تاہم اب سیکیورٹی حالات بہتر ہوچکے،انگلینڈ کے متعدد کرکٹرز پاکستان سپر لیگ میں بھی کھیل چکے،ایم سی سی کی ٹیم بھی دورہ کرچکی ہے ، اگرچہ انگلش بورڈ نے واضح کیاکہ پاکستان کاٹور 2022ءمیں ہی شیڈول ہے تاہم جس طرح اہم کھلاڑیوں کے بغیر انگلش سائیڈ نے آئرلینڈ سے ون ڈے سیریز کھیلی ویسے ہی شیڈو ٹیم ٹی 20 سیریز کیلئے مختصر ٹورکر بھی سکتی ہے۔

مزید :

کھیل -