جندول‘ ہیضہ اور دوسری مہلک امراض نے وبائی شکل اختیار کر لی

  جندول‘ ہیضہ اور دوسری مہلک امراض نے وبائی شکل اختیار کر لی

  

جندول (نمائندہ پاکستان)جندول سب ڈویژن میں حیضے اور دیگر پیچیدہ ا مراض نے وبا کے شکل اختیار کرلیا،جس سے ایک نو سال بچہ جانبحق،دیگر سنیکڑوں بچے اور بزارگ متاثر،کئی دیگر بچوں،خواتین اور بزرگ ہسپتالوں داخل،کاری ہسپتالوں میں کوئی بندوبست نہیں،عوام اپنے مدد اپ کے تحد اپنے جیب سے علاج کروانے پر مجبور،اعلی احکام سے نوٹس کا مطالبہ تفصلات کے مطابق جندول سب ڈویژن تحصیل ثمرباغ کے مختلف گاوں،درنگال،کامبٹ،لیکوڑ،رحیم اباد،اشاڑکوڑ،شینہ صدبرکلی،مسکئنی اور بادین گنڈیرے  میں حیضے اور دیگر پیٹ کے پیچیدہ امراض نے وبا کی شکل اختیار کرلیا ہے مقامی  لوگوں کے مطابق اس وقت ہسپتالوں میں حیضے اور دیگر امراض میں مبتلاء بچوں کی تعداد میں روزبروز اضافہ بڑھتا جارہاہیں جس کیلئے تاحال کوئی اقدامات نظر نہیں ارہاہے۔مقامی لوگوں کے مطابق اس وقت ٹی ایچ کیو ہسپتال ثمرباغ اورمعیارو کے ایمرجنسی وارڈ میں سرکار سطح پر ایک سیرانج تک دستیاب نہیں،مقامی لوگوں اپنے بچوں اور دیگر بزرگ خواتین کا تمام علاج اپنے مدد اپ کے تحد کروانے پر مجبور ہے۔مقامی لوگوں نے صوبائی حکومت  سے صحت کارڈ میں حیضے اور بخار سمیت دیگر چھوٹے موٹے بیماریوں کو شامل کرنے کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ ایسا صحت کارڈ سے کیا فائدہ جس کو اشد ضرورت کی وقت کام نہیں اتے۔انہونے علی احکام سے فوری طور پر گاوں گاوں میڈئکل ٹیمیں بھجوانے کا مطالبہ کیا۔۔

مزید :

کامرس -پشاورصفحہ آخر -