یومِ استحصالِ کشمیر،پریٹوریا میں بھارتی ہائی کمشن کے سامنے احتجاجی مظاہرہ

یومِ استحصالِ کشمیر،پریٹوریا میں بھارتی ہائی کمشن کے سامنے احتجاجی مظاہرہ

  

پریٹوریا(فہیم شبیر سے) یومِ استحصالِ کشمیر کے حوالے سے جنوبی افریقہ کے دارالحکومت پریٹوریا میں سیکڑوں افراد نے مقبوضہ کشمیرمیں قابض بھارتی فوج کے ظلم وستم کے خلاف بھارتی ہائی کمیشن کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کیا،مظاہرین نے پلے کارڈز اور پینا فلیکس اٹھا رکھے تھے جن پر درج تھا کہ کشمیریوں سے ہمارا رشتہ بہت پرانا ہے جو قیامت تک قائم رہے گا،بھارت کشمیریوں پر مظالم بند کرے،مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے مقررین نے کہا کہ بی جے پی حکومت کشمیریوں کی آبادی، ثقافتی شناخت اور سیاسی امتیازات کو مکمل طور پر ختم کرنے کی کوشش کر رہی ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ کشمیریوں کو ان کی اپنی سرزمین پر اقلیت میں تبدیل کرنے کے لیے تقریباً تین سال قبل 5 اگست 2019 کو شروع ہونے والا مذموم منصوبہ پوری رفتار سے آگے بڑھ رہا ہے۔سید احمد ولید بخاری نے کہا کہ 9 لاکھ بھارتی قابض افواج نے بدترین فوجی محاصرے میں کشمیریوں کو یرغمال بنا رکھاہے، عالمی برادری کو مداخلت کی ضرورت ہے۔ انہوں نے کشمیری عوام کے حق خودارادیت کیلئے اوور سیز پاکستانیوں کی سیاسی، سفارتی اور اخلاقی حمایت کا اعادہ کیا۔مقررین کی جانب سے قید کشمیری رہنما یاسین ملک کی رہائی اور انصاف کا پرزور مطالبہ کیا گیا۔

احتجاجی مظاہرہ

مزید :

صفحہ آخر -