نئے چیف الیکشن کمشنر سیاسی جماعتوں کا آن بورڈلے کر انکے تحفظات دور کریں, سیاسی رہنما قانونی ماہرین

نئے چیف الیکشن کمشنر سیاسی جماعتوں کا آن بورڈلے کر انکے تحفظات دور کریں, ...

                      لاہور(محمد نواز سنگرا)نئے چیف الیکشن کمشنر جسٹس(ر) سردار پرتمام سیاسی جماعتوںنے بھر پور اعتماد کا ظہار کیا ہے۔انہیں غیر جانبداری کا مظاہرہ کرتے ہوئے تمام سیاسی جماعتوں کو آن بورڈ لیکر آئین اور قانون کیمطابق تحفظات دور کرنے چاہئیں۔موجودہ حالات میں چیف الیکشن کمیشن کی جاب بہت مشکل ہے ادارے کو از سر نو تعمیر کرنے کی ضرورت ہے۔ان خیالات کا اظہار ملک کے سیاسی اور قانونی ماہرین نے روز نامہ پاکستان سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ہے۔مسلم لیگ(ن)لاہور کے صدر پرویز ملک نے کہا کہ نو منتخب چیف الیکشن کمشنر آئندہ الیکشن کو شفاف بنانے کےلئے نئی ٹیم تشکیل دینی چاہیے اور امیدواروں کی شکایات کو فوری حل کرنے کا نظام لانا چاہیے۔تحریک انصاف کے رہنما اور اپوزیشن لیڈرپنجاب اسمبلی میاں محمود الرشید نے کہا کہ موجودہ حالات میں چیف الیکشن کمشنر ایک مشکل جاب ہے ۔سابق الیکشن کمشنر ذمہ داریاں پوری نہیں کر سکا،جسٹس(ر)سردار رضا کو الیکشن کمیشن کی از سر نو تعمیر کرنی چاہیے۔جسٹس (ر)سردار رضا کو تحریک انصاف سمیت تمام سیاسی جماعتوں نے تسلیم کیا ہے ،انہیں تمام سٹیک ہولڈرز کو اعتماد میں لینا چاہیے ،آئینی عہدے پر ایڈہاک ازم کا خاتمہ خوش آئند ہے توقع ہے کہ نیا چیف الیکشن کمیشن مشکلات کو حل کرنے کی کوشش کریں گے۔سابق وفاقی وزیر حامد سعید کاظمی نے کہا کہ نئے چیف الیکشن کمیشن کو کسی ایک جماعت کا آلہ کار نہیں بننا چاہیے اور آئینی عہدے پر غیر جانبداری سے ذمہ داریاں سر انجام دینی چاہیں۔تحریک انصاف کے تحفظا ت دور کرنا بڑا چیلنج ہو گا ۔چیف الیکشن کمشنر کو تمام سیاسی جماعتوں کو آن بورڈ لے کر تحفظات دور کرنے چاہیں۔سپریم کورٹ بار کے صدر شفقت چوہان نے کہا کہ موجودہ حالات میں نئے چیف الیکشن کمیشن کو بہت احتیاط سے چلنا ہو گا۔ہارنے والے کا الزام لگانا وطیرہ بن چکا ہے شفاف الیکشن کرانے پڑیں گے اور بائیو میٹرک سسٹم بھی قائم کرنا ہو گا۔بحثیت صدر لاہور ہائیکورٹ بارسردار رضا کا انتخاب اچھا ہے اور توقع ہے تمام حالات کو کنٹرول کرنے میں بھر پور کردار ادا کریں۔

تحفظات

مزید : صفحہ آخر