لاہور پولیس کی سرکاری ویب سائٹ ساڑھے تین ماہ سے اپ ڈیٹ نہیں ہو سکی

لاہور پولیس کی سرکاری ویب سائٹ ساڑھے تین ماہ سے اپ ڈیٹ نہیں ہو سکی

لا ہور (شعیب بھٹی )لاہور پولیس کی سرکاری ویب سائیٹ لاہور پولیس کے انفارمشین ٹیکنالوجی ڈیپارٹمنٹ کی نااہلی کے باعث گزشتہ ساڑھے تین ماہ سے اپ ڈیٹ ہی نہیں ہو سکی ۔ پولیس ذرائع کے مطابق ایک سابق سی سی پی او لاہور نے شہریوں کی سہولت کے لئے لاہور پولیس کی سرکاری ویب سائیٹ لاہور پولیس کے انفارمشین ڈیپارٹمنٹ کے تعاون سے بنوائی تاکہ شہریوں کو شہر کے کرائم کے حوالے سے اپ ڈیٹ کیا جا سکے اور شہریوں کی جانب سے جرائم کو کم کرنے اور ان کے ساتھ ہونے والی زیادتیوں کا ازالہ بھی ویب سائیٹ پر ای میل کے ذریعے کیا جا سکے ۔مگر لاہور پولیس کے انفارمیشن ٹیکنالوجی ڈیپارٹمنٹ کیلاپرواہی کے باعث سرکاری ویب سائیٹ گزشتہ ساڑھے تین ماہ سے اپ ڈیٹ ہی نہ ہو سکی ہے ۔ لاہور پولیس کی ویب سائیٹ www. lahorepolice.gov.pk پر 2ستمبر کو ڈی آئی جی آپریشن ڈاکٹر حیدر اشرف کی جانب سے تھانہ باغبانپورہ پولیس کی کارکردگی 862شراب کی بوتلیں پکڑنے والا سرکاری ہینڈ آوٹ ہی دکھایا جا رہا ہے ۔ لاہور پولیس کی سرکاری ویب سائیٹ پر شہریوں کی جانب سے سی سی پی او لاہور اور دیگر افسران کے نام آنے والی ای میلز بھی ان افسران کو فراہم کی جا رہی ہیں ۔ شہری اپنے ساتھ ہونے والے ظلم کی داستانیں ای میلز کے ذریعے داد رسی کے لئے افسران تک پہنچاتے ہیں مگر لاہور پولیس کے انفارمیشن ٹیکنالوجی ڈیپارٹمنٹ کی عدم توجہی اور غفلت کے باعث سرکاری ویب سائیٹ ناکارہ ہونے کے دہانے پہنچ گئی ہے لاکھوں روپے کی لاگت سے تیار کی جانے والی سرکاری ویب سائیٹ کا کوئی پرسان حال نہیں ہے ۔ لاہور پولیس کی سرکاری ویب سائیٹ پر نہ تو سی سی پی او لاہور کی تصویر ہے اور نہ ہی سی سی پی او لاہور کی جانب سے شہریوں کے لئے جاری ہونے والا کوئی پیغام موجود ہے ۔ سی سی پی او لاہور کیپٹن (ر) محمد امین وینس کی بطور سی سی پی او لاہور تعیناتی کے بعد تاحال لاہور پولیس کے محکمہ انفارمیشن ڈیپارٹمنٹ نے سی سی پی او لاہور کی جانب سے شہریوں کے لئے جاری ہونے والے کسی بھی پیغام کو سرکاری ویب سائیٹ پر اپ لوڈ نہیں کیا ۔ ذرائع کا مزید کہنا ہے کہ لاہور پولیس کی انفارمیشن ٹیکنالوجی ڈیپارٹمنٹ میں بھاری معاوضوں پر لوگوں کو تعینات کیا گیا ہے جبکہ ضرورت سے زائد افراد کو وہاں پر تعینات کیا گیا ہے تاکہ لاہور شہر کے کرائم سمیت دیگر چیزوں کو سرکاری ویب سائیٹ پر روزانہ کی بنیاد پر اپ ڈیٹ کیا جا سکے ۔ مگر لاہور پولیس کے انفارمشین ٹیکنالوجی ڈیپارٹمنٹ نے چراغ تلے اندھیرا جیسی مثال کو سچ ثابت کر دیا ۔ سی سی پی او آفس میں پہلے فلور پر لاہور پولیس کے انفارمشین ٹیکنالوجی ڈیپارٹمنٹ کا خدا ہی خافظ ہے۔ واضح رہے کہ ایک سابق سی سی پی او لاہور کے دور میں سرکاری ویب سائیٹ کر روزانہ کی بنیاد پر اپ ڈیٹ کیا جاتا تھا تاکہ شہریوں کی داد رسی ہو سکے ۔

مزید : علاقائی