چین کا حیران کن" لٹکتا" قبرستان

چین کا حیران کن" لٹکتا" قبرستان
چین کا حیران کن

  

بیجنگ(نیوزڈیسک)آپ نے دنیا کے عجیب و غریب قبرستانوں کے بارے میں تو اکثر سن رکھا ہوگا لیکن چین میں ایک قبرستان ایسا بھی ہے جو کہ ہوا میں معلق قبروں پر مشتمل ہے ۔یہ قبرستان چین کے جنوبی صوبوں گانگ زیان اور سچوان کی پہاڑیوں میں پایا جاتا ہے ،یہ قبرستان چین کے ’بو‘ لوگوں نے بنایا تھا جو تقریباً 400سال قبل نا پید ہو چکا ہے۔ اس قبرستان میں کچھ قبریں 1500سال جبکہ کچھ 3000سال پرانی ہیں۔ ان قبروں کے تابوت کو لکڑی سے بنا کر انہیں کانسی کے ڈھکنوں سے ڈھانپا گیا ہے جبکہ قبروں کی اونچائی دس میٹر سے لے 130میٹر تک ہے ۔

مردہ عورت قبر میں زندہ لیکن ۔۔۔ جاننے کے لئے کلک کریں

مقامی لوگوں کا خیال ہے کہ اونچی قبریں بنانے کا مقصد خدا کے زیادہ نزدیک ہونا بھی ہو سکتا ہے اور یہ بھی ممکن ہے کہ ’بو‘ لوگ اپنے مردوں کی حفاظت کرنا چاہتے تھے۔ موسم کی شدت کے باعث یہ قبریں ٹوٹنا شروع ہوئیں تو ان کی حفاظت کا خیال آیا اور گذشتہ دس سال میں 20قبروں کو محفوظ بنا دیا گیا ہے۔ ’بو‘ لوگوں کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ یہ اقلیتی گروہ موجودہ چین کے صوبوں سچوان اور یونان کے قریب رہا کرتے تھے لیکن چار سو سال قبل یہ لوگ ختم ہوگئے لیکن جب تک یہ لوگ رہے اپنے مردوں کو اسی طرح دفناتے رہے ۔ان کے ختم ہونے کے بعد اس طرح کی قبروں کا رواج بھی انہیں کے ساتھ ختم ہوگیا۔

مزید : ڈیلی بائیٹس