باپ نے قرض اتارنے کے لیے 17سالہ بیٹی بیچ ڈالی

باپ نے قرض اتارنے کے لیے 17سالہ بیٹی بیچ ڈالی
باپ نے قرض اتارنے کے لیے 17سالہ بیٹی بیچ ڈالی

  

سرگودھا (ویب ڈیسک)والدین نے رقم کے لا لچ میں اپنی 17سالہ بیٹی کو ادھیڑ عمر شخص کے ہاتھ فروخت کردیا ۔تفصیالت کے مطابق ملز م کئی ماہ تک لڑکی سے زیادتی کرتا رہالڑکی بھاگ کر واپس آئی تو والدین نے دوبارہ کسی اور شخص کو بیچناچاہا تو متاثرہ لڑکی والدین کا گھر چھوڑ کر عدالت میں پہنچ گئی ۔ گذشتہ روز ایڈ یشنل سیشن جج سرگودھا محمد حسین چوہدری کی عدالت میں پیش ہو کر دھر یمہ کی 17سالہ نسرین نے بتا یا کہ سائلہ کے والد غلام علی نے اپنا قرض اتارنے کے لیے اسے چھ ماہ قبل ادھیڑعمر شخص کے ہاتھ فروخت کیا جو اسے اپنے ساتھ ایک ڈیرے پر لے گیا جہاں وہ کئی ماہ تک اس سے زیادتی کرتا رہا گذشتہ دنوں وہ اس کے چنگل سے آزاد ہو کر گھر واپس آئی تو والد غلام علی نے کسی اور شخص سے اسکا بیعانہ وصول کر لیارات کو والدہ نے اسے گھر سے بھاگ کر عدالت جانے کا مشورہ دیا جس پر وہ تمام رات گھر سے باہر رہی اور عدالت میں پیش ہوگی ۔ لڑکی کی درخواست پر فاضل جج نے تھانہ جھال چکیاں کے ایس ایچ او سے واقعہ کی رپورٹ طلب کرلی ۔

مزید : سرگودھا