محکمہ زکوٰۃ و عشر کا شہروں میں کمیٹیاں تشکیل دینے کیلئے سی ڈی اوز سے رابطہ

محکمہ زکوٰۃ و عشر کا شہروں میں کمیٹیاں تشکیل دینے کیلئے سی ڈی اوز سے رابطہ

لاہور(محمد نواز سنگرا)محکمہ زکواۃو عشر نے اضلاع، تحصیل اور مقامی سطح پر کمیٹیاں تشکیل دینے کیلئے ڈی سی اوز سے رابطے کر لئے ہیں۔متعلقہ ضلع کا ڈی سی او زکواۃ کمیٹی کے ممبران کے نام تجویز کر کے صوبائی کونسل کو بھجوائے گا۔جس کے بعد چئیرمین اور ممبران کو حتمی شکل دی جائے گی۔تفصیلات کے مطابق محکمہ زکواۃ اینڈ عشر نے پنجاب کے باقی راہ جانیوالے اضلاع میں کمیٹیاں تشکیل دینے کیلئے متعلقہ ڈی سی اوز سے رابطہ کر لیا ہے جس کے بعد ڈی سی اوز نام تجویز کر کے صوبائی زکواۃ کونسل کو بھجوائیں گے جہاں سے حتمی منظوری کے بعد اضلاع ،تحصیلوں اور مقامی سطح پرچئیرمین اور ممبران زکواۃ کمیٹی کا چناؤ کیا جائے گا۔متعدد اضلاع میں زکواۃ کمیٹیاں نہ ہونے کہ وجہ سے غرباء و مساکین سرکاری امداد سے بھی محروم ہو گئے ہیں۔واضح رہے کہ پنجاب کے 36اضلاع میں 4لاکھ افراد رجسٹرڈ ہیں جن میں محکمہ زکواۃ اینڈ عشر سالانہ 3ارب روبے تقسیم کرنے ہوتے ہیں جو کمیٹیاں نہ ہونے کی وجہ سے حقداروں تک نہیں پہنچ پاتے۔یہ بھی معلوم ہو ا ہے کہ ممبران زکواۃ کمیٹی کا چناؤ سیاسی بنیا پر کیا جاتا ہے جس وجہ سے زکواۃ حقداروں تک پہنچنے کی بجائے سیاستدانوں کے چہیتوں میں بند بانٹ ہوتی ہے اور زکواۃ میں سیاستدانوں کا کرادار گزشتہ وزیر اعلیٰ پنجاب الہٰی کے دور میں ہو ا اس سے قبل مساجد میں اعلان ہوتا تھا اور ایک قابل اور ایماندار شخص کا بطور ممبر زکواۃ کمیٹی چناؤ کیا جاتا تھا۔اب جو بندہ ڈی سی او بھجواتا ہے وہ سیاسی ہوتا ہے جس وجہ سے زکواۃ کے حقداروں کو مسائل پیدا ہوتے ہیں۔اس پر سیکرٹری زکواۃ اینڈ عشر حبیب الرحمٰن گیلانی نے بتایا کہ صوبے بھر میں 24ہزار400کمیٹیاں قائم کرناہوتی ہیں ایک بڑی تعداد کی وجہ سے کمیٹیاں بنانے میں تاخیر ہو جاتی ہے ،متعدد اضلاع میں زکواۃ کمیٹیاں تشکیل دی جا چکی ہیں اور جہاں رہ گئی ہیں ان پر کام جاری ہے جس سلسلے میں متعلقہ ڈی سی اوز سے بھی معاونت کیلئے رابطہ کیا گیا ہے۔ایڈمنسٹر زکواۃ اور ایک ممبر صوبائی زکواۃ کونسل کی ڈیوٹی لگائی ہے کہ وہ خصوصی طور پر کام کر کے کمیٹیوں کی تشکیل کو حتمی شکل دیں۔بہت سارے اضلاع میں پہلے سے موجود کمیٹیوں کی مدت پوری ہو گئی ہے جن میں دوبارہ بنانے پر کام جاری ہے۔

مزید : صفحہ آخر