حکومت حج آرگنائزرز کی مشاورت سے جامع پالیسی تیار کرے گی، عرفان صدیقی

حکومت حج آرگنائزرز کی مشاورت سے جامع پالیسی تیار کرے گی، عرفان صدیقی

لاہور (ڈویلپمنٹ سیل ) حج آرگنائزرز ایسوسی ایشن آف پاکستان (ہوپ ) کے مرکزی راہنما حافظ شفیق کاشف نے وزیراعظم نواز شریف کے معاون خصوصی برائے قومی امور عرفان صدیقی سے خصوصی ملاقات کی جسمیں حج 2016کی پالیسی پر تبادلہ خیال کیا گیا ،حافظ شفیق کاشف نے اس موقعہ پر معاون خصوصی سے مطالبہ کیا کہ حکومت پرائیویٹ و سرکاری اسکیم کا کرایہ یکساں ، ٹیکس ختم اور پرائیویٹ اداروں کو بھی سرکاری اسکیم جیسی سہولتیں دے تو پرائیویٹ حج سستا کیا جاسکتا ہے شفیق کاشف نے کہا کہ پرائیویٹ حج اسکیم کا مقصد حج کو سستا کرنا نہیں بلکہ اپنے بجٹ کے مطابق سہولتیں حاصل کرنے کے خواہشمند حجاج کو سروسز فراہم کرنا ہے کچھ حلقے حج ٹوور آپریٹرز کے متعلق حکومتی اداروں کو گمراہ کرنے کی کوشش کر رہے ہیں اور ملک کی ایک بڑی انڈسٹری کے مستقبل کو داؤ پر لگا کر لوگوں کو سٹرکوں پر لانا چاہتے ہیں اور یہ وہی لوگ ہیں جو مشرف اور پی پی پی کے دور حکومت میں بھی ناکام کوشش کرتے رہے ہیں اور سیاسی دباؤ کے ذریعے اپنے لیے کوٹہ حاصل کرنے کی غرض سے موجودہ نظام کو داؤ پر لگا نا چاہتے ہیں حافظ شفیق کاشف ے کہا کہ سروس پروائڈر ایگرئمنٹ (SPA)کی پابندی اور سعودی حکومت کی طرف سے حج آرگنائزرز کی کارکردگی کو تسلی بخش قرار دینے کے بعد آرگنائزرز کی حوصلہ افزائی کی بجائے ہراسا ں نہ کیا جائے وزیراعظم کے معاون خصوصی نے کہا کہ حکومت حج آرگنائزرز کی مشاورت سے جامع پالیسی تیار کرے گی اور جن پرائیویٹ ٹورز آپریٹرز کے خلاف شکایات نہیں ان کو بے توقیر نہیں کیا جائے گا بلکہ تجربہ کار ٹوورز آپریٹرز ایسی قابل عمل تجاویز لے کر آئیں جن کی مدد سے حکومت دونوں سکیموں کے حاجیوں کی خدمات کو مزید بہتر بنا سکے انہوں نے کہا کہ تجربہ کار نیک نام ٹوورآپریٹرز کی موجودگی میں نئے تجربات کی گنجائش نہیں ہے لہذا حج کوٹہ کی تقسیم اور خرید و فروخت کا نیا پنڈورابکس نہیں کھلنے دیں گے انہوں نے کہا کہ حج و عمرہ کے متعلق عوام کے حقوق کے تحفظ کیلئے حج و عمرہ ایکٹ لے کر آئیں گے تاکہ عازمین حج و عمرہ کی شکایات کو دور کیا جاسکے ۔

مزید : صفحہ آخر