بو حسن المھاجر داعش کا نیا ترجمان مقرر، ترکی کو دھمکیاں

بو حسن المھاجر داعش کا نیا ترجمان مقرر، ترکی کو دھمکیاں

  

قاہرہ(این این آئی)شدت پسند گروپ داعش نے انٹرنیٹ پر ایک ریکارڈڈ صوتی پیغام پوسٹ کیا ہے جس میں ابو الحسن المھاجر نامی ایک جنگجو کو تنظیم کا نیا ترجمان مقرر کرنے کا اعلان کیا گیا ہے۔میڈیارپورٹس کے مطابق داعش کے لیے میڈیا پروپیگنڈہ کرنے والی ’الفرقان‘ نامی ویب سائیٹ پر پوسٹ کردہ فوٹیج میں کہا گیا ہے کہ ابو الحسن المھاجر تنظیم کے نئے ترجمان ہیں۔خیال رہے کہ رواں سال ستمبر میں امریکا نے داعش کے ترجمان ابو محمد العدنانی کو ایک فضائی حملے میں ہلاک کرنے کا دعویٰ کیا تھا۔ العدنانی کو 30 اگست کو شام میں ایک فضائی حملے میں ہلاک کردیا گیا تھا۔ادھر داعش کے نئے ترجمان ابو الحسن المہاجر نے ترکی کے خلاف دہشت گردانہ کارروائیوں کی دھمکی دی ہے۔ المہاجر نے داعشی جنگجوؤں سے کہا کہ وہ ترک سفارت خانوں اور قونصل خانوں پر حملے کریں۔ اس کے ساتھ ساتھ داعشی جنگجوؤں سے کہا گیا کہ وہ مغربی موصل میں تل عفر قصبے سے فرار کے بجائے ڈٹ کر مقابلہ کریں۔ایک صوتی پیغام میں المہاجر کاکہنا تھا کہ داعش کے حامی سیکولر ترکی کے عناصر کو ہر جگہ نشانہ بنائیں گے۔ داعش ترکی کے فوجی، اقتصادی اور ابلاغی مراکز پرحملوں کے ساتھ ساتھ سفارت خانوں اور دنیا بھر میں اس کے قونصل خانوں پر بھی حملے کرے گی۔

مزید :

عالمی منظر -