پنجاب بھرکے ملازمین کے ڈی سی اوز کے دفاتر کے سامنے مظاہرے

پنجاب بھرکے ملازمین کے ڈی سی اوز کے دفاتر کے سامنے مظاہرے

  

لاہور( خبرنگار) صوبے بھر کے سرکاری ملازمین اپنے مطالبات کی منظوری کے لئے ایک مرتبہ پھر سڑکوں پر آ گئے ہیں۔ گزشتہ روز پنجاب بھر میں ایپکا کی کال پر ملازمین نے ڈی سی اوز کے دفاتر کے سامنے مظاہرے کیے جبکہ لاہور میں ملازمین نے سول سیکرٹریٹ کا گھیراؤ کر کے احتجاجی دھرنا دیا ۔ اس موقع پر صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے حاجی محمد ارشاد چوہدری، صدر ایپکا پنجاب نے کہا کہ حکومت پنجاب کی جانب سے ایپکا کے جائز مطالباتجن میں اپ گریڈیشن سے محروم ملازمین کی اپ گریڈیشن کرنا ، ہاؤس رینٹ ریکوزیشن کی منظوری ، تنخواہوں میں 7.5 فیصد دیگر صوبوں کی طرح اضافہ، کنٹریکٹ ملازمینمحکمہ زکوۃ، زراعت واٹرمینجمنٹ ، پبلک ہیلتھ انجینئرنگ و دیگر کو ریگولر کرنا،انشورنس کی رقم کی ریٹائرمنٹ پربھی ادائیگی و دیگر پر تاحال کوئی عملدآمد نہ ہوا ہے اور کوئی مثبت جواب موصول نہ ہوا ہے جس پرایک مرتبہ پھر پنجاب بھر کے تمام اضلاع کے ملازمین زیر قیادت ضلعی صدور ڈی سی اوآفسز کے باہراحتجاج کرتے ہوئے دھرنے دیئے گئے اور ملازمین دشمن پالیسیوں کے خلاف احتجاجی مظاہرے کئے گئے۔ لاہور میں پنجاب لوکل گورنمنٹ کمپلیکس سے سول سیکرٹریٹ تک ریلی نکالی گئی جس کی قیادت حاجی محمد ارشاد چوہدری، صدر ایپکا پنجاب ، لالہ محمد اسلم صدر ایپکا لاہور ڈویژن دیگر عہدیدران ایپکا و صدور ایپکا لاہور ڈویژن و تمام محکمہ جات کے ہزاروں ملازمین شریک ہوئے اور احتجاج کرتے ہوئے سول سیکرٹریٹ کے باہر دھرنادیا گیااور اے جی پنجاب کا پتلا نذر آتش کیا گیا۔شرکا ریلی نے پلے کارڈ اُٹھا رکھے تھے جن پر ایپکا کے مطالبات اور نعرے درج تھے ۔ جس کی وجہ سے سول سیکرٹریٹ کے باہر ٹریفک گھنٹوں جام رہی اور سیکرٹریٹ کے اند ر حکومتی مشینری کا کام مکمل طور پر بند رہا۔دھرنے کے دوران ایڈیشنل چیف سیکرٹری پنجاب نے ایپکا قائدین حاجی محمدارشاد چوہدری،لالہ محمد اسلم، ظفر اقبال کمبوہ، تنویر اکرام بٹ ، میاں ریاض ، ذوالفقار احمد بھٹی سے مذاکرات کیے اور یقین دھانی کروائی کے ایپکا کے مطالبات جلد منظور کر لیے جائیں گئے اور باقاعدہ نوٹیفیکیشن جار ی ہو جائے گا ۔

مزید :

صفحہ آخر -