کرپشن پر سزائے موت،جمشید دستی کا دوبارہ قومی اسمبلی میں بل پیش کرنیکا اعلان

کرپشن پر سزائے موت،جمشید دستی کا دوبارہ قومی اسمبلی میں بل پیش کرنیکا اعلان

  

ملتان (سٹی رپورٹر)پاکستان عوامی راج پارٹی کے سربراہ و رکن قومی اسمبلی جمشید دستی نے کرپشن پر سزائے موت کے قانون کے حوالے سے دوبارہ قومی اسمبلی میں بل پیش کرنے کا اعلان کر دیا ہے یہ بات انہوں نے ٹیلی فون پر سینئر صحافیوں سے گفتگو کرتے ہو ئے کہی جمشید دستی نے مزید (بقیہ نمبر6صفحہ12پر )

کہا کہ پاکستان کو دہشت گردوں سے زیادہ مالی دہشت گردوں سے خطرہ ہےَ انہوں نے کہا کہ جب میں نے پہلے کرپشن پر سزائے موت کا بل پیش کیا تھا تو تب ملک کی بڑی اپوزیشن اور حکمران جماعت نے مخالفت کی تھی لیکن اب جب اپوزیشن جماعتیں کرپشن کا راگ الاپ رہی ہیں تو پھر میں نے یہ بل دوبارہ قومی اسمبلی میں لانے کا فیصلہ کیا ہے اور اب جو بھی سیاسی جماعت میرے بل کی مخالفت کرے گی تو اس کا پول کھل جائے گا اور میں اس جماعت کو عوام کے سامنے بے نقاب کروں گا انہوں نے کہا کہ ایف آئی اے ،نیب ، انٹی کرپشن پر چوروں اور ڈاکوؤں کا غلبہ ہے جبکہ میرا موقف ہے کہ کرپشن میں کوئی بھی ملوث ہو جرم ثابت ہونے پر خواہ سیاستدان ہو یا بیوروکریٹ یاکوئی اور ہو کو سرعام پھانسی دی جائے اور کرپشن کرنے والے کی نعش کم ازکم دو دن تک چوک پر لٹکائی جائےَ انہوں نے کہا کہ میرے نزدیک پانی چوری ، دونمبر زرعی ادویات بیچنے والوں کو بھی پھانسی دی جائے جمشید دستی نے مزید کہا کہ وہ قومی اسمبلی میں ایک دوروز میں بل پیش کریں گے انہوں نے شناختی کارڈ کے لئے عمر کی حد کم کرنے کا بھی مطالبہ کیا ہے اور سندھ اسمبلی میں مذہبی حوالے سے پیش کئے جانے والے بل کو مسترد کیا ہے ۔انہوں نے کہا کہ قومی اسمبلی مین سندھ اسمبلی کے بل کو چیلنج کریں گے اور اسے مسترد کرائیں گے جمشید دستی نے اعلان کیا کہ اگر قومی اسمبلی میں میرا کرپشن کے خلاف بل پاس نہ ہوا تو میں پارلیمنٹ کے سامنے احتجاجی مظاہرہ اور بھوک ہڑتال کرکے جماعت اسلامی ،جمیعت علماء اسلام (ف ) ،مسلم لیگ (ن) ، پیپلز پارٹی اور تحریک انصاف کے خلاف احتجاج ریکارڈ کراؤں گا ۔

جمشید دستی

مزید :

ملتان صفحہ آخر -