شانگلہ کے علاقہ بورشٹ کوز کانا میں خسرہ کی وباء پھوٹ پڑی

شانگلہ کے علاقہ بورشٹ کوز کانا میں خسرہ کی وباء پھوٹ پڑی

  

الپوری (ڈسٹر کٹ رپورٹر)شانگلہ کے علاقہ بورشٹ کوز کانا میں خسرہ کی وباء پھوٹ پڑی،7بچے خسرہ سے جان بحق ہوگئے،خسرہ نے پورے گاؤں بورشٹ کو اپنی لپیٹ میں لے لیا ہے ،سینکڑوں بچے متاثر ہو گئے ہیں۔ جان بحق ہونے والوں میں عظمت علی،استور علی،واجد علی،ہدایت اللہ،داؤد خان،وجیہ بی بی اور فر وا زیہ بی بی شامل ہیں۔ محکمہ صحت شانگلہ نے علاقے کو میڈیکل ٹیمیں بھیج دئے، خسرہ بچاؤ ویکسنیشن ٹیکے شروع کردیا ہے ،ڈی ایچ او شانگلہ ڈاکٹر شفیع الملک ۔تاحال کوئی بھی ہمارے گاؤں میں نہیں ائے،بار بار بی ایچ یو جانے کے باوجود کوئی پرسان حال نہیں ، بیماری مزید پھیلنے کا خدشہ ہے۔ مقامی کونسلر نور رحمان ،گل حسین،رسول شاہ ودیگر علاقہ مکینوں کی میڈیا سے بات چیت۔تفصیلات کے مطابق ضلع شانگلہ کے علاقے بورشٹ کوزکانا میں خسرہ کی بیماری سے منگل تک 7بچے لقمہ اجل بن گئے ہیں جبکہ خسرہ سے سینکڑوں بچے بھی متاثر ہوئے ہیں،محکمہ صحت شانگلہ کے ڈٖسٹرکٹ افسر نے بتایا کہ علاقہ بورشٹ میں ڈاکٹروں کی ٹیمیں بھجوائے گئے ہیں اور ویکسنیشن ٹیکے لگوانے کا عمل شروع کیا گیا ہے ،خسرہ کا سیمپل لیکر اسلام اباد بھیج رہے ہیں جس سے مرض کا پتہ چلے گا۔دوسری جانب علاقہ مکینوں اور بلدیاتی کونسلر نے میڈیا کو تفصیلات بتاتے ہوئے کہا کہ خسرہ بیماری کے بارے میں محکمہ صحت شانگلہ اور مقامی بی ایچ یو کو اگاہ کر چکے ہیں لیکن کوئی بھی علاقے میں نہ پہنچ سکا ،جن کی غفلت سے بیماری مزید پھیلنے کا خدشہ ہے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -