فاٹا ریفارم کمیٹی کی رپورٹ جھوٹ کا پلندہ ہے ،قبائلی امن جرگہ

فاٹا ریفارم کمیٹی کی رپورٹ جھوٹ کا پلندہ ہے ،قبائلی امن جرگہ

  

چارسدہ (بیورورپورٹ)قبائلی امن جرگہ نے فاٹار یفارم کمیٹی کے رپورٹ کو جھوٹ کا پلندہ قرار دیکر گورنر خیبر پختونخوا سے فوری طور پر مستعفی ہونے کا مطالبہ کر دیا ۔ پہلے مرحلے میں فاٹامیں اصلاحات جبکہ دوسرے مرحلے میں فاٹا کو الگ صوبہ بنایا جائے ورنہ اس حوالے سے ریفرنڈم کرایا جائے ۔قبائلی لوگ دہشت گرد نہیں بلکہ دہشت زدہ ہے ۔ ہمیں پاکستان سے وفاداری اور محبت کی سزا دی جا رہی ہے ۔ قبائلی امن جرگہ سے مقررین کا خطاب ۔ تفصیلات کے مطابق دارالعلوم اسلامیہ چارسدہ میں سابق ایم این اے مولانا غلام محمد صادق کے زیر صدارت فاٹا کے مستقبل کے حوالے سے ایک بڑا قبائلی امن جرگہ منعقد ہوا جس میں مہمند ایجنسی اور فاٹا کے دیگر علاقوں کے سینکڑوں لوگوں اور مشران نے شرکت کی ۔ قبائلی امن جرگہ سے خطاب کر تے ہوئے مولانا مفتی عبد الشکور ، مفتی اعجاز شنواری ،مولانا عبد الرحمان ، مولانا غلام محمد صادق ، مولانا سید گوہر شاہ ، مولانا عبد البصیر ، مولانا عبد الروف شاکر اور دیگر نے کہا کہ فاٹا کے مستقبل کا فیصلہ اسلام آباد سے کسی صورت منظور نہیں بلکہ فاٹا کے عوام اپنے مستقبل کا فیصلہ خود کرینگے ۔ انہوں نے کہا کہ تاریخی لحاظ سے قبائلی عوام ہر لحاظ سے نڈر ، بہادر اور پاکستان کے وفادار ہیں ۔ وفاقی حکومت کی ریفارم کمیٹی کی رپورٹ جھوٹ کا پلندہ ہے جس میں قبائلی عوام کو باغی قرار دیا گیا ہے جو کہ شرم ناک ہے ۔ قبائلیوں کے ساتھ ہر دور میں ظلم اور ناانصافی ہو ئی ہے ۔ آپریشن ضرب عضب میں ہمارے خواتین بچوں اور بوڑھوں کو گھروں سے بے دخل کر کے این جی اوز کے رحم و کرم پر چھوڑ دیا گیا۔قبائل دہشت گرد نہیں بلکہ دہشت زدہ ہے ۔ ہمیں پاکستان سے محبت اور وفاداری کی سزاد ی جا رہی ہے ۔مقررین نے کہا کہ ہم فاٹا اصلاحات کے حامی ہے اور اصلاحات کے بعد اگلے مرحلے میں فاٹا کو الگ صوبہ بنانے کے حق میں ہے ۔ فاٹا کو خیبر پختونخوا میں ضم کرنے کی ہر کوشش ناکام بنا ئینگے ۔ فاٹا کے مستقبل کے حوالے سے قبائلی عوام کی رائے جاننے کیلئے ریفرنڈم بہترین حل ہے ۔مقررین نے کہا کہ گورنر خیبر پختونخوا اقبال ظفر جھگڑا ایک بے اختیار اور کمزور اعصاب کے مالک ہے جن کو فوری طور پر اپنے عہدے سے مستعفی ہو جائے ۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -