حکومت کی 15 مارچ کو مردم شماری شروع کرانے کی یقین دہانی، ایسا نہ ہوا تو سنگین نتائج مرتب ہوں گے:چیف جسٹس

حکومت کی 15 مارچ کو مردم شماری شروع کرانے کی یقین دہانی، ایسا نہ ہوا تو سنگین ...
حکومت کی 15 مارچ کو مردم شماری شروع کرانے کی یقین دہانی، ایسا نہ ہوا تو سنگین نتائج مرتب ہوں گے:چیف جسٹس

  

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) حکومت کی جانب سے 15 مارچ کو مردم شماری شروع کرنے کی تحریری یقین دہانی پر عدالت نے مردم شماری میں تاخیر سے متعلق ازخود نوٹس نمٹا دیا ہے۔ چیف جسٹس نے ریمارکس دئیے کہ امید ہے کہ حکومت اپنی یقین دہانی پر عملدرآمد کرائے گی۔

”کمیشن بنائیں یا ہم خود فیصلہ دیں “سپریم کورٹ نے وکلاءکو اپنے موکلین سے جواب لینے کی ہدایت کے بعدپاناما کیس کی سماعت 9دسمبر تک ملتوی کردی

تفصیلات کے مطابق چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس انور ظہیر جمالی کی سربراہی میں 3 رکنی بینچ نے مرم شماری میں تاخیر سے متعلق کیس کی سماعت کی جس دوران ایڈیشنل اٹارنی جنرل نے وفاقی حکومت کی جانب سے 15 مارچ کو مردم شماری شروع کرانے کی تحریری یقین دہانی جمع کرائی۔ ایڈیشنل اٹارنی جنرل کی جانب سے دی گئی یقین دہانی میں کہا گیا ہے کہ مردم شماری 15 مارچ کو شروع کی جائے گی اور 2 ماہ میں مکمل کر لی جائے گی۔

”سوچ رہا ہوں اپنے پیسے بھی شریف خاندان کو دے دوں تاکہ ڈبل ہو جائیں “: شیخ رشید

چیف جسٹس نے ریمارکس دئیے کہ امید ہے حکومت اپنی یقین دہانی پر عملدرآمد کرے گی جبکہ عملدرآمد نہ کیا گیا تو توہین عدالت کی مرتکب ہو گی اور اس کے سنگین نتائج مرتب ہوں گے۔

مزید :

قومی -اہم خبریں -