عوام کے ساتھ دھوکہ دہی پر پی ایس او کو 15کروڑ روپے جرمانہ ہو گیا

عوام کے ساتھ دھوکہ دہی پر پی ایس او کو 15کروڑ روپے جرمانہ ہو گیا
عوام کے ساتھ دھوکہ دہی پر پی ایس او کو 15کروڑ روپے جرمانہ ہو گیا

  

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک )کمپیٹشن کمیشن آف پاکستان (سی سی پی ) نے پاکستان سٹیٹ آئل (پی ایس او)کو 15کروڑ روپے جرمانہ کردیا ۔پی ایس او نے اپنی مصنوعات ”پریمئم ایکس ایل پیٹرول“اور ”گرین پلس“ڈیزل کی اشتہاری مہم میں غلط اور دھو کہ دہی پر مبنی معلومات فراہم کیں اور اس طرح پی ایس او کمپیٹشن ایکٹ 2010کے سیکشن 10کے تحت جرم کا مرتکب پایا گیا جس پر ادارے کو 15کروڑ روپے جرمانہ کیا گیا ۔

بدلتاہے رنگ آسماں کیسے کیسے،راحیل شریف کی شبیر شریف کی قبر پر آمد،میڈیا خاموش

سی سی پی کے چیئر پرسن واڈیا خلیل ،ڈاکٹر شہزاد انصر اور اکرام الحق قریشی نے پی ایس او پر جرمانے کا حکم دیا ۔سی سی پی کو ایک شکایت موصول ہوئی جس میں کہا گیا کہ پی ایس او ”پریمئم ایکس ایل“ پیٹرول اور ”گرین پلس“ڈیزل کی تشہیر میں دعویٰ کر رہی ہے کہ اس سے گاڑی میں تیل کی کھپت کم ہو جاتی ہے اور انجن کی کارکردگی بڑھ جاتی ہے ۔اس تشہری مہم کو دیکھ کر سی سی پی نے تحقیقات کیں تو پتہ چلا کہ پی ایس او کے دعوے میں کوئی صداقت نہیں ہے ۔سی سی پی نے کہا کہ پی ایس او کے جھوٹے دعوے سے استعمال کنندگان کو تاثر ملا کہ اس پیٹرول سے کھپت کم ہو جائے گی اور یہ پیٹرول دیگر کمپنیوں کے پیٹرول سے اچھی کوالٹی کا ہے جس سے مد مقابل کمپنیوں کو نقصان ہوا ۔سی سی پی نے جرمانے کے ساتھ ساتھ پی ایس او کو یہ اشتہاری مہم بھی بند کرنے کا حکم دیا ۔سی سی پی نے پی ایس او کو 30دن کی ڈیڈ لائن دیتے ہوئے حکم دیا کہ اس تاثر کو ختم کیا جائے کہ پی ایس او کی فیول پراڈکٹ ماحول دوست اور پرئمیم کوالٹی کی ہیں ۔سی سی پی نے پی ایس او کو ہدایت کی کہ انگلش اور اردو اخباروں میں اشتہار دے کر واضح کر ے کہ پی ایس او کی فیول پراڈکٹس میں کھپت کم کرنے کے لیے کوئی اضافی مادے استعمال نہیں کیے گئے ۔

مزید :

قومی -