مزدور کو خوشحال کیے بغیر ملک خوشحال نہیں ہوسکتا،سیف اللہ خالد

مزدور کو خوشحال کیے بغیر ملک خوشحال نہیں ہوسکتا،سیف اللہ خالد

لاہور(نمائندہ خصوصی )ملی مسلم لیگ کے صدر سیف اللہ خالد نے کہا ہے کہ معاشرے میں مزدور ریڑھ کی ہڈی کی حیثیت رکھتا ہے۔ مزدور کو خوشحال کیے بغیر ملک خوشحال نہیں ہوسکتا۔افسوس کی بات ہے کہ مزدوروں کے مسائل کے حل کی طرف کسی حکومت نے توجہ نہیں دی۔ملی مسلم لیگ مزدوروں کا ان کا جائز مقام اور حق دلوائے گی۔ہم پاکستان میں بسنے والے کروڑوں مزدوروں کے ساتھ ہیں اوران کے جائز حقوق کی جدوجہد میں ہم ہر قدم پر ان کے ساتھ کھڑے ہوں گے۔ ان خیالات کا اظہارانہوں نے ملی لیبر فیڈریشن کے صدر ایس ڈی ثاقب سے ملاقات کے دوران گفتگو کرتے ہوئے کیا۔

سیف اللہ خالد نے انہیں کامیاب قومی لیبر کانفرنس کے انعقاد پر مبارکباد دی۔

سیف اللہ خالد نے کہا کہ مزدوروں کے حقوق کے تحفظ کیلئے سیاسی جماعتیں بڑے بلندوبانگ دعوے کرتی ہیں ، ہر سال مزدوروں کا عالمی دن بھی منایا جاتا ہے، ملک بھر میں سیمینارکا انعقاد کیا جاتا ہے لیکن ان سیاسی جماعتوں کی طرف سے کبھی اپنے وعدوں کی پاسداری نہیں کی گئی اور مزدور طبقہ کامعاشی قتل اسی طرح جاری ہے۔ جب تک ملک میں دیانتدار اور نظریہ پاکستان کو دل و جان سے تسلیم کرنے والی قیادت برسراقتدار نہیں آتی محنت کش طبقہ کا مسائل کی دلدل سے نکلناممکن دکھائی نہیں دیتا۔ مزدور کی کم سے کم اجرت کے قانون پر کسی جگہ عمل درآمد نہیں کیا جاتا۔ لیبر قوانین صحیح معنوں میں نافذ نہیں ہیں جس سے مزدوروں کا استحصال ہوتا ہے۔ملی مسلم لیگ کا منشور ہے کہ غریبوں، مزدوروں اور کسانوں کو ان کے جائز حقوق ملنے چاہئیں۔عام لوگ، غریب اور محنت کش طبقہ بھی اسی معاشرے کا حصہ ہے، انہیں حقوق سے محروم نہیں رہنا چاہیے۔ اس سے مایوسیاں اور انارکی پھیلتی ہے۔ نبی اکرم ﷺ کا فرمان ہے کہ مزدور کو اس کا پسینہ خشک ہونے سے پہلے اس کی مزدور ی ملنی چاہیے۔ اس حدیث میں ہمارے لئے بہت بڑا سبق ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے خدمت کی سیاست کا علم بلند کیا ہے اور ہم نے مزدوروں کے حقوق کی جنگ لڑنی ہے۔ اس کیلئے ملی مسلم لیگ، اس کا ونگ ملی لیبر فیڈریشن، واپڈا، ریلوے اور دیگر تمام یونینز کے ساتھ اور ان کے ہمقدم ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 4