الیکشن کمیشن، رکن سندھ اسمبلی میر اللہ بخش تالپور کی مبینہ دوسری بیوی آئندہ سماعت پر طلب

الیکشن کمیشن، رکن سندھ اسمبلی میر اللہ بخش تالپور کی مبینہ دوسری بیوی آئندہ ...

اسلام آباد(آئی این پی) الیکشن کمیشن نے پاکستان پیپلز پارٹی کے رکن سندھ اسمبلی میر اللہ بخش تالپور کی کاغذات نامزدگی میں ظاہر نہ کی گئی مبینہ دوسری بیوی کو آئندہ سماعت پر طلب کرتے ہوئے نادرا سے خاتون کے شناختی کارڈ کا ریکارڈ بھی طلب کر لیا۔جمعرات کو الیکشن کمیشن میں پیپلز پارٹی کے رکن سندھ اسمبلی میر اللہ بخش کی نا اہلی سے متعلق درخواست پرچیف الیکشن کمشنر کی سربراہی میں تین رکنی بینچ نے سماعت کی،سماعت کے دوران درخواست گزار میر عبداللہ کے وکیل حسن مرتضیٰ مان الیکشن کمیشن کے سامنے پیش ہوئے جبکہ میر اللہ بخش تالپور کی طرف سے وکیل پرکاش کمار پیش ہوئے ، حسن مرتضیٰ مان نے موقف اختیار کیا کہ میر اللہ بخش تالپور نے کاغذات نامزدگی میں اپنی دوسری بیوی کو ظاہر نہیں کیا،30 جولائی 2016 کو دوسری شادی ہوئی،دوسری بیوی کے موجودہ شناختی کارڈ میں شوہر کا نام اللہ بخش تالپور درج ہے،اللہ بخش تالپور کے وکیل نے موقف اختیار کیا کہ نکاح نامے پر نہ وہ دستخط اللہ بخش تالپور کے ہیں نہ ان کا اور ان کے والد کا نام درست لکھا گیا ہے،وہ دستخط درخواست گزار میر عبداللہ نے کیئے ہیں،میر اللہ بخش تالپورنے نہیں کیئے،میر اللہ بخش تالپور تو اس خاتون کو جانتے ہی نہیں اور اس خاتون سے ان کی شادی ہی نہیں ہوئی،یہ ساری کارستانی میر عبداللہ کی ہے ،یہ ڈاکومنٹس مینیج کیئے گئے ہیں،الیکشن کمیشن نے نادرا سے خاتون کے شناختی کارڈ کا ریکارڈ طلب کرلیا جبکہ خاتون کو بھی آئندہ سماعت پر طلب کر لیا جبکہ کیس کی سماعت 20 دسمبر تک ملتوی کردی۔(ع ا)

الیکشن کمیشن

مزید : صفحہ آخر