پاکستان میں امریکی ایمبیسیڈرز فنڈ گرانٹ پروگرام کا آغاز

پاکستان میں امریکی ایمبیسیڈرز فنڈ گرانٹ پروگرام کا آغاز

لاہور(خصوصی رپورٹ) امریکی قونصل جنرل کولین کرینویلگی نے کہا ہے کہ امریکی ایمبیسیڈرز فنڈ گرانٹ پروگرام کے تحت لوگوں کے معاشی اور سماجی حالات بہتر بنانے کیلئے کام کر نے والی تنظیموں کو پاکستان بھر میں 200 گرانٹس فراہم کی جائیں گی۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے پنجاب میں امریکی ادارہ برائے بین الاقوامی ترقی (USAID) کے کئی ملین ڈالرز پر مشتمل ایمبیسیڈرز فنڈ گرانٹ پروگرام کی صوبائی سطح کی تقریب رونمائی سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔امریکی قونصل جنرل جنرل کولین کرینویلگی نے کہا کہ اس پروگرام سے لوگ مقامی مسائل کے حل کیلئے ایسے اقدامات کرسکیں گے جن کے فوری اور دیرپا نتائج ملیں۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب میں دی جانے والی پہلی گرانٹس سے قصور میں بچوں کو مدد، ملتان میں فنی تربیت کی فراہم اور مظفر گڑھ میں آفات سے نمٹنے کی مؤثر تیاری میں مدد دی جائے گی۔یہ مختلف النوع منصوبے ایک زیادہ مستحکم اور خوشحال ملک بنانے کیلئے پاکستان اور امریکہ کے باہمی تعاون کے عکاس ہیں‘‘۔ایمبیسیڈرز فنڈ گرانٹ پروگرام پاکستان میں متعین امریکی سفیر کی طرف سے معین کردہ ترجیحی شعبوں میں اعانت فراہم کرتا ہے۔ موجودہ مرحلے میں جن شعبوں میں ترقی کیلئے اقدامات اٹھائے جائیں گے ان میں ثقافت اور فنونِ لطیفہ، قدرتی آفات سے نمٹنے کی تیاری، توانائی بحران سے نبردآزما ہونے کیلئے چھوٹے پیمانے کے پروگرام ، سماجی نوعیت کے کاروبار کی حوصلہ افزائی اور پسماندہ طبقات کی اعانت کرنا شامل ہیں۔ نجی شعبہ کی تنظیمیں، غیر سرکاری ادارے اور غیر سرکاری علمی تحقیقی اور تربیتی ادارے، بشمول خواتین کی زیرِ قیادت کام کرنے والے ادارے اور وہ ادارے جو آزاد جموں و کشمیر اور گلگت بلتستان میں کام کر رہے ہیں، اس گرانٹ کے حصول کیلئے درخواست دینے کے اہل ہیں۔یو ایس ایڈ کے تعاون سے چلنے والے اس پروگرام کا انتظام ٹرسٹ فار ڈیموکریٹک ایجو کیشن اینڈ اکاؤنٹبیلیٹی کے ذمہ ہے۔ اس پروگرام کے گزشتہ مرحلے میں 346گرانٹس دی گئیں جن سے 20لاکھ سے زیادہ پاکستانی مستفید ہوئے۔

ایمبیسیڈرز فنڈ گرانٹ پروگرام

مزید : صفحہ آخر