سول لائنز ڈویژن کے ’’سست‘‘ ایس ایچ اوز کیخلاف محکمانہ کارروائی کا حکم

سول لائنز ڈویژن کے ’’سست‘‘ ایس ایچ اوز کیخلاف محکمانہ کارروائی کا حکم

لا ہو ر (کر ائم رپو رٹر)ڈی آئی جی آپریشنز لاہور محمد وقاص نذیر نے جرائم پر قابو نہ پانے پرسول لائنز ڈویژن کے تمام ایس ایچ اوز کے خلاف آئندہ سخت محکمانہ کارروائی کا حکم دے دیا۔جرائم کی بیخ کنی نہ کرنے والے افسر کا ایس ایچ او رہنے کا کوئی حق نہیں۔ ڈی آئی جی آپریشنز لاہور محمد وقاص نذیرکی زیر صدارت سول لائنز ڈویژن کی اینٹی کرائم میٹنگ رات گئے تک جاری رہی۔ایس ایس پی آپریشنز لاہور کیپٹن(ر) مستنصر فیروز، ایس پی سول لائنز ڈویژن صفدر رضا کاظمی، تما م ایس ڈی پی او ز اور ایس ایچ او زنے شرکت کی۔ ڈی آئی جی آپریشنز لاہور محمد وقاص نذیرنے سول لائنز ڈویژن میں جرائم کے خلاف کارروائیوں اور روک تھام کیلئے اُٹھائے گئے اقدامات کا جائزہ لیا۔جرائم پر قابونہ پانے پر ایس ایچ او سول لائنزمحمد عادل،ایس ایچ او ریس کورس حافظ نعمان، ایس ایچ او قلعہ گجر سنگھ شرجیل ضیاء، ایس ایچ او گڑھی شاہوغلام عباس، ایس ایچ او پرانی انارکلی طاہر محمود، ایس ایچ او مزنگ طاہر زین العابدین اور ایس ایچ او لٹن روڈ پر سخت اظہارِ برہمی اور آخری موقع دیا گیا۔

جرائم کی وارداتیں بڑھنے پر ایس ایچ او شالیمار محمد احمد یار، ایس ایچ او گجر پورہ احمد رضا اور ایس ایچ او مغلپورہ رائے ناصر عباس کی سخت سرزنش اور کارکردگی بہتر کرنے کیلئے 15 دن کی مہلت دی۔انہوں نے کہا کہ15 دن بعد جرائم پر قابو نہ پانے پر کسی قسم کا بہانہ نہیں سنوں گا۔ اضافی وسائل ہونے کے باجودجرائم پر قابو نہ پانا ایس ایچ او کی نااہلی کو ظاہر کرتا ہے۔متعلقہ ایس پی ناقص کارکردگی کے حامل ایس ایچ او ز کو فوری طور پر تبدیل کروائیں۔

مزید : علاقائی