کسان اتحاد کا مطالبات منظور ہونے تک پیچھے ہٹنے کا اعلان

کسان اتحاد کا مطالبات منظور ہونے تک پیچھے ہٹنے کا اعلان

لاہور( کرائم رپورٹر،نیوز رپورٹر،آئی این پی) لاہور سمیت پنجاب کے دیگر شہروں سے آنیوالے کسانوں نے رات کھلے آسمان تلے گزاردی ،مطالبات کے حق میں دوسرے روز بھی احتجاج دھرنا،پنجاب حکومت نے مذاکرات کی بجائے ’’خاموشی ‘‘اختیار کر لی ‘کسانوں کے احتجاج کے باعث لاہور کی کئی سڑکوں بدترین ٹر یفک کی بند ش سے شہری دھکے کھاتے رہے جبکہ کسان اتحاد کا مطالبات منظور کرائے بغیر پیچھے نہ ہٹنے کا اعلان کر دیا ۔ تفصیلات کے مطابق کسانوں کاٹھوکر نیاز بیگ پر جاری احتجاجی دھرنا دوسرے روز بھی جاری رہا ،کسانوں نے رات کھلے آسمان تلے گزاری، ان کا کہنا ہے کہ جب تک ان کے مطالبات پورے نہیں ہوتے وہ احتجاج جاری رکھیں گے، مظاہرین کا یوریا کے نرخ، گنے کی قیمت مقرر کرنے کا مطالبہ، واضح رہے 2016 اور 2017 میں کسان احتجاج کر چکے ہیں، آج بھی وہی پرانے مطالبات ہیں جبکہ دوسری طرف پولیس نے ملتان روڈ کو مکمل طور پر بند کر دیا، جس کے باعث ارد گرد کی سڑکوں پر ٹریفک کا شدید دبا ؤہے، سکول اور دفاتر کو جانیوالوں کو شدید پریشانی کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے، ادھر مظاہرین نے مطالبات پورے نہ ہونے کی صورت میں شہر کا رخ کرنے کی دھمکی دی ہوئی ہے ان کا کہنا ہے کہ اگر ان کے مطالبات نا پورے کئے گئے تو وہ پنجاب اسمبلی کے باہر احتجاج کریں گے۔

کسانوں کا دھرنا

مزید : کراچی صفحہ اول