نوجوان لڑکی کے ساتھ دو سال تک جنسی زیادتی، اور اس دوران اس کا اپنا باپ کیا کرتا رہا؟ جان کر ہر انسان شرمندہ ہوجائے

نوجوان لڑکی کے ساتھ دو سال تک جنسی زیادتی، اور اس دوران اس کا اپنا باپ کیا ...
نوجوان لڑکی کے ساتھ دو سال تک جنسی زیادتی، اور اس دوران اس کا اپنا باپ کیا کرتا رہا؟ جان کر ہر انسان شرمندہ ہوجائے

  

نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک)بھارت میں ایک لڑکی کے ساتھ دو سال تک اجتماعی جنسی زیادتی کی جاتی رہی اور ملزمان میں ایک ایسا شخص بھی شامل تھا کہ سن کر انسانیت شرم سے پانی پانی ہو جائے۔ ٹائمز آف انڈیا کے مطابق یہ ہولناک واقعہ ریاست کیرالہ کے ساحلی شہر کنور میں پیش آیا جہاں دو سال تک اس لڑکی کو ہوس کا نشانہ بنانے والے 7ملزمان میں خود لڑکی کا باپ بھی شامل تھا۔ کنور ڈسٹرکٹ پولیس چیف جی شیوا وکرم نے بتایا ہے کہ لڑکی 10ویں جماعت کی طالبہ ہے جسے دو سال سے اس کا باپ اور 6دیگر مرد جنسی زیادتی کا نشانہ بنا رہے تھے۔ لڑکی نے بتایا ہے کہ ان لوگوں نے اس عرصے میں مختلف مواقع پر اس کے ساتھ زیادتی کی۔ گزشتہ ماہ نومبر میں بھی اس کے باپ سمیت چار افراد نے اسے ہوس کا نشانہ بنایا۔

شیوا وکرم کے مطابق لڑکی نے دو سال تک یہ بات چھپائے رکھی۔ سب سے پہلے لڑکی کے بھائی کو شک ہوا اوراس نے بہن سے اس حوالے سے بات کی۔ تبھی لڑکی کی والدہ کو اس معاملے کا علم ہوا اور اس نے پولیس کو رپورٹ کر دی۔ اب تک 5ملزمان کو گرفتار کیا جا چکا ہے جن میں سے چار کی عمریں 30ءکی دہائی میں ہیں۔ لڑکی کے بھائی نے پولیس کو بتایا کہ ان لوگوں نے میری بہن کے ساتھ جنسی زیادتی کی ویڈیوز بھی بنا رکھی تھیں۔ انہوں نے وہ ویڈیوزدکھا کر مجھے بھی بلیک میل کرنا شروع کیا جہاں سے مجھے اس معاملے کا پتا چلا۔

مزید : ڈیلی بائیٹس