”سنسر شپ میڈیا پر نہیں بلکہ ان پر لگائیں کیونکہ۔۔۔“ سلمان غنی نے ایسی بات کہہ دی کہ آپ بھی ان کی حمایت کریںگے

”سنسر شپ میڈیا پر نہیں بلکہ ان پر لگائیں کیونکہ۔۔۔“ سلمان غنی نے ایسی بات ...
”سنسر شپ میڈیا پر نہیں بلکہ ان پر لگائیں کیونکہ۔۔۔“ سلمان غنی نے ایسی بات کہہ دی کہ آپ بھی ان کی حمایت کریںگے

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) تجزیہ کارسلمان غنی نے کہاہے کہ ہماری فوج کا ترجمان درد مندانہ طور پر یہ بات کررہاہے تو اس ساری تنقید اور تبصروں کا جواز ہماری حکومت نے مہیا کیاہے ، یہ سودن کا بخار حکومت نے خود چڑھایا تھا ، سنسر شپ میڈیا پر نہیں بلکہ پاکستان کے حکمرانوں پر نافذ کرنی چاہئے۔

دنیا نیوز کے پروگرام ”تھنک ٹینک “میں گفتگو کرتے ہوئے سلمان غنی نے کہا کہ دفاع اورخارجہ پالیسی کے حوالے سے پاکستانی میڈیا ریاست کے ساتھ کھڑا ہے اور ہمارے اندر بھی کچھ کالی بھیڑیں ہونگی جن کے مغربی مفادات ہونگے ۔ انہوں نے کہا کہ پاک فوج کے ترجمان نے چھ ماہ کی بات ملکی ترقی کیلئے کی ہے لیکن وزیر اطلاعات تو میڈیا کا کوئی کردار ہی نہیں سمجھ رہے اور اپنا موبائل دکھاتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اگر ہماری فوج کا ترجمان درد مندانہ طور پر یہ بات کررہاہے تو اس ساری تنقید اور تبصروں کا جواز ہماری حکومت نے مہیا کیاہے ، یہ سودن کا بخار حکومت نے خود چڑھایا تھا ۔

ان کا کہنا تھا کہ یہ سنسر شپ میڈیا پر نہیں بلکہ پاکستان کے حکمرانوں پر نافذ کرنی چاہئے ۔انہوں نے کہا کہ میڈیا کو پاکستان کا میڈیا ہی ہوناچاہئے ، مودی کے بھارت میں آنے کے بعد بہتر ہواہے کہ ہمارے ہاں جو بھارت سے تعلقات کیلئے بھانت بھانت کی بولیاں بولی جارہی تھیں ان کی قلعی کھل گئی ہے ۔ان کا کہنا تھاکہ جوشخص اپنے ملک کے حساس معاملات پر بھی سیاست یا صحافت کرتاہے اس کے گرد بھی شکنجہ کسا جانا چاہئے ،عمران خان کوجو مینڈیٹ ملا ہے ، اس کے مطابق ڈلیور کریں ، اداروں کا سہارانہ لیں ، ادارے پاکستان کے ساتھ کھڑ ے ہیں۔

مزید : قومی