مشرق وسطیٰ سے انخلا کی پالیسی تبدیل، امریکہ نے دوبارہ فوج بھیجنے پر غور شروع کردیا

مشرق وسطیٰ سے انخلا کی پالیسی تبدیل، امریکہ نے دوبارہ فوج بھیجنے پر غور شروع ...
مشرق وسطیٰ سے انخلا کی پالیسی تبدیل، امریکہ نے دوبارہ فوج بھیجنے پر غور شروع کردیا

  



واشنگٹن(اظہر زمان،بیوروچیف) امریکی نائب وزیر دفاع جان روڈ نے بتایا کہ پینٹا گون مشرق وسطیٰ سے انخلاء  کی پالیسی تبد یل کر کے دوبارہ مزید فوج وہاں بھیجنے پر غور کر رہا ہے۔ کیپٹل ہل کی رپورٹ کے مطابق انہوں نے یہ بیان گزشتہ روز سینیٹ کی امور خارجہ کمیٹی کے سامنے شہادت دیتے ہوئے دیا۔ مسٹر روڈ نے کمیٹی کو بتایا کہ وزیر دفاع مارک الیسپر اس امر کے حامی ہیں کہ خطے میں ایران سے درپیش خطرات میں اضافے کے باعث وہاں مزید فوج بھیجنی ضروری ہو گئی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ ایران کی طرف سے عراق اور شام میں مداخلت بڑھ گئی ہے اور اس کے علاوہ وہ اپنے ملک کے اندر مظاہرین پر بھی تشدد کر رہا ہے۔ ان حالات میں امریکہ کو کسی بھی وقت مزید فوج کی ضرورت پڑ سکتی ہے۔ اس دوران امریکی حکام نے یقین ظاہر کیا ہے کہ مزید پانچ سے سات ہزار فوجی مشرق وسطیٰ میں متعین ہو سکتے ہیں۔ گزشتہ روز صدر ٹرمپ نے بھی میڈیا سے با ت چیت کرتے ہوئے کہا تھا کہ امریکہ مشرق وسطیٰ میں ہر خطرے کا مقابلہ پوری قوت سے کرے گا اور اس سلسلے میں جلد فیصلہ کیا جائے گا۔

مزید : بین الاقوامی