جماعت اسلامی کا قبائلی اضلاع کے حقوق کیلئے احتجاج کا اعلان

  جماعت اسلامی کا قبائلی اضلاع کے حقوق کیلئے احتجاج کا اعلان

  

بنوں (نمائندہ خصوصی)جماعت اسلامی خیبر پختونخوا نے ضلع بنوں,شمالی وزیرستان اور لکی مروت میں قبائلی اضلاع کے حقوق کے بارے نو دسمبر کو احتجاجی دھرنے کا اعلان کردیا تینوں دھرنے کئی کئی گھنٹوں تک ضلعی پریس کلبوں کے سامنے جاری رہیں گے جس میں صوبائی قائدین خطابات کریں گے ضلع شمالی وزیرستان جماعت اسلامی کے امیر ملک رحمن اللہ نے میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہاکہ قبائلی اضلاع کے حقوق کسی کو ہڑپ کرنے نہیں دیں گے قبائلی اضلاع کے عوام جن مسائل مقابلہ کررہے ہیں ان کی مثال کہیں نہیں ملتی قبائلی اضلاع کے عوام اب بیدار ہیں اپنے بنیادی حقوق کسی کو ہڑپ کرنے نہیں دیں گے اُنہوں نے کہاکہ شمالی وزیرستان معدنیات کے لحاظ سے ایک مالا مال ضلع ہے اس موقع پر ضلعی جنرل سیکرٹری محمد کاشف جے آئی یوتھ کے صدر ملک امشاد اللہ,جنرل سیکرٹری رضوان اللہ اور دیگر بھی موجود تھے اُنہوں نے کہاکہ ہم اپنی مٹی پر امن چاہتے ہیں گرفتار افراد کی رہائی چاہتے ہیں اور عدالت کے سامنے پیش کرنا چاہتے ہیں جن لوگوں کے نقصانات ہوئے ہیں ان کا ازالہ کیا جائے اور جن کے سروے نہیں ہوئے ہیں ان کا سروے شروع کیا جائے جن قوموں کے مابین اراضی کے تنازعات پر لڑائی کا سلسلہ شروع ہے ان کا مسئلہ فوری طور پر افہام و تفہیم سے حل کیا جائے اُنہوں نے کہاکہ غلام خان بارڈر کا عملہ پرانی جگہ پر تعینات کیا جائے اور شمالی وزیرستان کو فری زون قرار دیا جائے اُنہوں نے کہا کہ منشیات کی روک تھام اور ہسپتالوں کی حالت زار کا نوٹس لیا جائے بصورت دیگر جماعت اسلامی دھرنوں کا سلسلہ شروع کرے گی۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -