محکمہ صحت کی اراضی پر 18 سال سے قابض فیملی ہیلتھ سنٹر سنگیڑھ کو سیل 

محکمہ صحت کی اراضی پر 18 سال سے قابض فیملی ہیلتھ سنٹر سنگیڑھ کو سیل 

  

کوھاٹ (بیورو رپورٹ) محکمہ صحت کی اراضی پر 18 سال سے قابض فیملی ہیلتھ سنٹر سنگیڑھ کو سیل کر دیا گیا تین دن میں مریض اور سامان یہاں سے شفٹ کر کے عمارت کو خالی کرانے کا نوٹس‘ گیٹ پر پویس نفری تعینات‘ ضلعی انتظامیہ کی ہدایت پر اسسٹنٹ کمشنر‘ ٹی ایم اے سٹاف اور لیاقت ہسپتال انتظامیہ کا ایکشن‘ کار سرکار میں مداخلت پر چار شہری گرفتار اور بعد میں رہا‘ تفصیلات کے مطابق پرانا زنانہ سنگیڑھ ہسپتال کی عمارت پر اٹھارہ سال قبل غیر سرکاری تنظیم کی حمایت سے فیملی ہیلتھ سنٹر قائم کر کے اس پر قبضہ کر لیا گیا تھا جو کہ محکمہ صحت کوھاٹ کی ملکیت تھی محکمہ صحت حکام کے بار بار نوٹس دینے کے باوجود قبضہ مافیا اس عمارت کو خالی کرنے پر آمادہ نہ تھا گزشتہ روز ضلعی انتظامیہ نے بھرپور ایکشن لیا اور اسسٹنٹ کمشنر طلحہ زبیر‘ ڈپٹی ڈی ایم ایس لیاقت میموریل ہسپتال ڈاکٹر اکرام اللہ اور ٹی ایم اے انفورسٹمنٹ آفیسر محمد وقاص نے پولیس نفری کے ہمراہ فیملی ہیلتھ سنٹر پر چھاپہ مارا اور اس کے کمروں‘ دفاتر اور وارڈز کو سیل کر دیا اور تین دن میں یہاں سے مریض اور سامان شفٹ کر کے عمارت کو خالی کرانے کا حکم دیا جس کے لیے سنٹر کے گیٹ پر پولیس نفری تعینات کر دی گئی کار سرکار میں مداخلت پر فیاض محمد بھولو سمیت چار افراد کو گرفتار کر لیا تاہم علاقہ مشران کی درخواست پر بعد ازاں انہیں چھوڑ دیا گیا۔ 

مزید :

پشاورصفحہ آخر -